آپ آف لائن ہیں
پیر 13؍محرم الحرام 1440ھ 24؍ ستمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
شیشے کا پل چین کا تعمیراتی شاہکار

میدان سائنس کا ہو ،ٹیکنالوجی کایا تعمیرات کا !چین نت نئی اور حیرت انگیزتعمیرات اور ایجادات کے حوالے سےدنیا بھر میں مشہور ہے۔ حالیہ برسوں میں چین کی سائنس اور ٹیکنالوجی کے شعبے میں حیران کن کامیابی نے دنیا بھر میںجہاں اس کا نام روشن کیا ہے، وہاں چین کےحیرت میں مبتلا کردینے والےتعمیراتی شاہکار، عجائبات سے کم نہیں۔

دنیا میں پل تو آپ نے بہت دیکھے ہوں گے، تاہم چین دنیا کا سب سے بڑا اور حیرت انگیز پل تعمیر کرکے نئی تاریخ رقم کردی ہے۔ اس پل کی خصوصیت ہے کہ یہ دنیا کا سب سے طویل پل ہونے کے علاوہ شیشے سے تعمیر کیا گیا ہے۔ اس پل پر چلنے والے افراد کے لیےمضبوط دل ہونا بے حد ضروری ہے، کیونکہ کمزور دل افراد کےلیے اس پر چلنا ناممکن ہے۔آئیے جانتے ہیں کہ یہ پل کیسا ہےاور اس کی تعمیرات سے متعلق حقائق کیا ہیں۔

مقام

یہ پل چین کے مرکزی صوبے ہونان میں ’’شینجیاجی ‘‘کے مقام پرواقع نیشنل پارک میں 11,900ایکڑ رقبے پرتعمیر کیا گیا ہے،جو’اوتار‘ (جہاں ہالی ووڈ کی کامیاب فلم اوتارفلمائی گئی ) نامی دو پہاڑی چوٹیوں کو آپس میںملاتا ہے۔گزشتہ برس اس پل کو عوام کے لیے کھولا گیاتھا۔ اس پل کی لمبائی 430 میٹر ہے، جبکہ اسے300میٹر گہری کھائی پر تعمیر کیا گیا ہے، جس کے سبب اس پل کو دنیا کانا صرف سب سے لمبا بلکہ سب سے اونچا پل بھی کہا جاتا ہے۔

ڈیزائن اور تعمیراتی لاگت

اس پل کا تعمیر اتی ڈیزائن بنانےکے لیےدنیا بھر میںمشہور اسرائیلی آرکیٹیکٹ ہیم دوتان کاانتخاب کیاگیا۔ ہیم دو تان نے دنیا کے سب سے طویل اور 4میٹر چوڑےپل کو ڈیزائن کیا۔ پل کی تعمیرچائنا کے ہیبے بیلو گروپ (Hebei Bailu Group)کی جانب سے کروائی گئی۔ پل کی تعمیر 18ماہ کے دوران مکمل کی گئی اور اس پر460ملین یو آن (48ملین پاؤنڈ) کی تعمیراتی لاگت آئی۔اس پل کی تعمیر کے لیے تلےTitanium Alloyنامی مضبوط ترین شیشے کا انتخاب کیا گیا۔ یہ شیشہ اتنا شفاف ہے کہ ہزارو ں فٹ نیچے کا منظر صاف دکھائی دیتا ہے۔

محفوظ ہونے سے متعلق خدشات کیسے دور کیے گئے؟

یہ پل استعمال کے لیے کتنا محفوظ ہے؟ اس حوالے سے آرکیٹیکٹ ہیم دوتان کہتے ہیںکہ اس میں شیشے کی تین شفاف تہوں کے 99 حصے ہیں۔ تعمیرسے قبل 40 ٹن وزن کےہمراہ بھاری ٹرک گلاس پینل سے گزاراگیا ۔ہیم دوتان کے مطابق، یہی نہیں ہم نے پل کو عوام کے لیے کھولنے سے قبل مختلف تقریبات میںلوگوں کودعوت دی کہ وہ آئیں اور پانچ منٹ تک اس پل پر ہتھوڑے برسائیں۔ اس کا نتیجہ یہ ہوا کہ پانچ منٹ تک ہتھوڑے برسانے سےشیشے کی پہلی تہہ پر خراش آئی جبکہ باقی دو تہیں محفوظ رہیں ۔ہیم دوتان کا کہنا ہے کہ پل پر 2200مسافر ایک ساتھ بآسانی چل سکتے ہیں،تاہم حفاظت کو یقینی بنانے کے پیش نظر اس پل پر صرف 500سیاحوں کو بیک وقت آنے کی اجازت دی جاتی ہے۔ اس دوران انھیں محسوس ہوتا ہے کہ جیسے وہ ٹھوس زمین پر چل رہے ہوں ۔

شیشے کا پل چین کا تعمیراتی شاہکار

ہیم دوتان کا کہنا ہے کہ میں نے پل کوکسی تعمیراتی شاہکار کے طور پر ڈیزائن نہیں کیا بلکہ اس کی تعمیر کچھ غائبانہ انداز سے کی۔آرکیٹیکٹ کے مطابق پل کے ارد گرد ایک تھیٹر (بیضوی طرز کی تماش گاہ ) بنائے جانے کا ارادہ ہے، جس کے بعد پل کو میوزک کنسرٹ اور فیشن شو کے لیے مختص کردیا جائے گا۔اس پل کی تعمیر کے بعد چینی حکومت کی جانب سے سیکیوریٹی خدشات کے پیش نظر دو چیزوں پر پابندی عائد کی گئی ہے، جس میں سے ایک( Stiletto Heel)ہےاوردوسری سیلفی اسٹک، جس سے متعلق حکام کو خدشہ ہے کہ سیلفی اسٹک اور پینسل ہیل دونوں اس پل پرچلنےوالے افراد کے لیے نقصان دہ ثابت ہوسکتی ہیں۔

اگر بات کی جائے پل پر سیاحوں کے لیے موجود خاص بات کی تواس پل میں ایک ویو پوائنٹ بھی بنایا گیا ہے، جہاں سے پل کےنیچے بہتی آبشار کا نظارہ بھی کیا جا سکتا ہے، جبکہ قریب ہی مہم جوئی کے شوقین سیاحوں کے لیے Bungee Jump کی سہولیات بھی موجود ہیں۔تو ہماری مانیے، جب بھی آپ چین جائیں، اس شیشے کے پل کا نظارہ کرنے کے لیے وقت ضرور نکالیں۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں