آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل12؍ذیقعد 1440ھ 16؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


کابینہ کے اجلاس میں صدر ٹرمپ نے سابق سوویت یونین اور افغان جنگ کے موضوع پر جو اظہار خیال کیاجس نے سب کو حیران کردیا ۔

ان کا کہنا تھا کہ امریکا طالبان سے اور دوسرے لوگوں سے مذاکرات کررہا ہے ۔ روس کبھی سوویت یونین تھا ۔ افغانستان نے اسے روس بنایا کیونکہ سوویت یونین افغانستان میں جنگ لڑتے ہوئے دیوالیا ہوگیا تھا ۔

صدر ٹرمپ کا کہنا تھا کہ روس افغانستان میں اس لیے گیا تھا کہ دہشت گرد روس میں داخل ہورہے تھے ۔ روس کو افغانستان میں مداخلت کا حق تھا ۔

صدر ٹرمپ کے اس بیان پر ناقدین کا کہنا ہے کہ ٹرمپ نے یہ باتیں کرکے افغانستان میں نہ صرف سابق سوویت یونین کی مداخلت جائز قرار دے دی ہے ۔ بلکہ ان کا مقصد افغانستان سے امریکی فوج کی واپسی کی راہ بھی ہموار کرنا ہے ۔

امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ افغانستان میں سابق سوویت یونین کی مداخلت کے معاملے پر ان کے حالیہ ارشادات نے تاریخ دانوں کو بھی سر پکڑنے پر مجبور کردیا ۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں