آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار15؍محرم الحرام 1441ھ 15؍ستمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

فائرنگ سے ہلاک شخص کے اہلخانہ کا لاش سڑک پر رکھ کر احتجاج

کراچی (اسٹاف رپورٹر )ضلع ملیر کے فقیرا گوٹھ اور نور محمد گوٹھ میں فائرنگ سے 2 افراد جاں بحق ہو گئے،تفصیلات کے مطابق فقیرا گوٹھ میں ہفتہ کی شب نامعلوم ملزمان کی فائرنگ سے زخمی ہونے والا 24 سالہ ثناءاللہ ولد اختر دوران علاج عباسی شہید اسپتا ل میں دم توڑ گیا،پولیس کے مطابق مقتول اسی علاقے کا رہائشی اور ہوٹل پر ملازمت کرتا تھا ، مقتول نے راستے میں شمس نامی شہری کو لفٹ دی تھی جس نے پولیس بتایا کہ 2 افراد راستے میں کھڑے تھے،ایک شخص نے رکنے کا اشارہ کیا جس پر ثنا ءاللہ نے موٹر سائیکل ذرا فاصلے پر جا کر روکی، اسی اثناءمیں ایک ملزم نے اس پر فائرنگ کردی اور فرارہوگئے،پولیس نے واقعے کوڈکیتی مزاحمت کا شاخسانہ ظاہر کیا ہے ،بعدازاں مقتول کے اہل خا نہ و علاقہ مکینوں نے قتل کی واردات پر موٹر وے پر لاش کو رکھ کر احتجاج کیا تاہم پولیس حکام نے موقع پر پہنچ کر مظاہرین کو مذاکرات کے بعد منتشر کر کے سڑک کو ٹریفک کے لیے کھول دیا،دریں اثنا گلشن معمار تھانے کی حدودنور محمد گوٹھ کریم شاہ درگاہ ، علی اکبر مسجد کے قریب نامعلوم ملزمان نے دوران ڈکیتی مزاحمت پر فائرنگ کر کے32 سالہ شاہد ولد عبدالمجید کو قتل کردیا اور فرا ر ہوگئےجس کی لاش عباسی شہید اسپتال پہنچائی گئی۔

شہر قائد/ شہر کی آواز سے مزید