آپ آف لائن ہیں
بدھ14؍شعبان المعظم 1441ھ 8؍اپریل 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

انرجی ایفیشنٹ سے مراد ایسا گھرہے، جہاں آپ توانائی کا دانشمندانہ استعمال کریں یا پھر ایسے متبادل کا انتخاب کریں جو آپ کی جیب اور ماحول پر گراںنہ گزرے۔ اب جبکہ سولر انرجی کا زمانہ ہے تو آپ پرائمری پاور ذرائع کیلئے 100فیصد شمسی توانائی پر انحصار کر سکتے ہیں۔

چاردیواری کی تیاری

عمارت کے بیرونی اور اندرونی حصے میں دیواریں، چھتیں، فرش، کھڑکیاں اور دروازے وغیرہ مل کر ایک عمارت کی شکل سامنے لاتے ہیں۔ اگر اسی خاکے میں مؤثر توانائی والے پہلو شامل کرلیےجائیں اور کم توانائی سےملنے والی بھرپور روشنی، حرارت ، ٹھنڈ ک اور ہواکی آمد و رفت کا بہتر نظام ہو تو یوٹیلیٹی بلز پر آنے والے اخراجات میں کافی کمی آسکتی ہے۔ اپنے مکان کا ڈھانچہ کھڑا کرتے وقت آپ درج ذیل اقدامات کرسکتے ہیں۔

٭ دیواروں میں کسی قسم کا رخنہ نہ ہو، بھرائی کرکے ہر قسم کے لیکیج کو بند کیا جائے۔

٭ ہوا کی آمدورفت میں رکاوٹوں کو دور کرکے اس کا بہتر نظام بنائیں۔

٭ چھت کو ٹھنڈا رکھنے کیلئے اس کے اوپر پودے وغیرہ یا دھوپ کی شد ت سے بچنے کیلئے شیڈ لگایا جائے۔

٭ دیواروں کے ساتھ درخت لگائے جائیں جن کا سایہ ان پر پڑتا ہو۔

سولر پینل کا استعمال

ہمارے ملک میں اکثر لوڈ شیڈنگ کا مسئلہ رہتا ہے۔ بجلی کے بار بار تعطل کے نتیجے میں گھر کی برقی مصنوعات کو نقصان سے بچانے کیلئے ہمیں توانائی کے متبادل ذرائع تلاش کرنے کی ضرورت ہے، اس کا سب سے آسان اور سستا حل سولر پینل ہے۔ 

اگرچہ تین طرح کے سولر پینلز دنیا بھر میں استعمال ہوتے ہیں، سنگل کرسٹل سیلیکون پینلز یا مونوکرسٹلائن، پولی سیلیکون پینلز یا پولی کرسٹلائن اور ٹی ایف ٹی پینلز۔ عموماً صارفین کی جانب سے سنگل کرسٹل سیلیکون یا پولی سیلیکون پینلز کا انتخاب کیا جاتاہے، طلب کی وجہ سے مارکیٹ میں ان کی بھرمار ہے۔

شمسی توانائی پر منتقل ہونے کے حوالے سے ماہرین مشورہ دیتے ہیں کہ اپنے بجلی کے لوڈ کو کم کرنے کے لیے ایل ای ڈی لائٹس کا استعمال کیا جائے جو کہ بہت کم بجلی استعمال کرتی ہیں جبکہ چلتی بھی زیادہ ہیں۔ یہ قدرے مہنگی ہوتی ہیں مگر طویل المیعاد بنیادوں پر کفایتی رہتی ہیں۔ اسی طرح انورٹر والے ریفریجریٹرز، فریزر اور ایئرکنڈیشنرز بھی مقبولیت حاصل کررہے ہیں۔

برطانیہ کی گلاسگو یونیورسٹی کے سائنسدانوں نے ایسے ٹائلز بھی ایجاد کیے ہیں جونہ صرف بجلی پیدا کر سکتے ہیں بلکہ انسان کا وزن برداشت کرنے کے ساتھ ساتھ واٹر پروف بھی ہیں۔ سڑکوں پر سولر ٹائلز کی تنصیب سے بجلی پیدا کی جاسکتی ہے۔ متبادل توانائی کے بہت سارے ذرائع قدرت نے ہمیں دیے ہیں۔ ان کا دانشمندانہ استعمال کرکے ہم بہت سے مسائل سے بچ سکتے ہیں اور ایک آرام دہ زندگی گزار سکتے ہیں۔

سولر واٹر ہیٹر

سولر واٹر ہیٹر سورج کی حرارت کو ہیٹ انرجی میں تبدیل کرتے ہوئے پانی گرم کردیتا ہے۔ اسی لیے اگرآپ کو نہانے، کپڑے یا برتن دھونے کے لیے گرم پانی کی ضرورت ہے تو آپ سولر واٹر ہیٹر لگا کراپنا بجلی کا بل کم کرسکتے ہیں۔

بائیو ماس گیس

کچن میں بچ جانے والا کھانا، کچی سبزیاں اور ان کے چھلکے، لکڑیاں اور کھاد، استعمال شدہ چائے کی پتی اور خراب ہونے والی ڈیری مصنوعات وغیرہ سے حاصل ہونے والی گیس کو بائیو ماس گیس کہتے ہیں ۔ اس کوکام میں لا کر بھی توانائی حاصل کی جاسکتی ہے ۔

پانی کا ذخیرہ

قطرہ قطرہ دریا بنتا ہے لیکن اگر قطرہ قطرہ گرتا رہے تو پانی کی ٹنکیاں خالی ہو جاتی ہیں۔ اسی لیے نل وغیرہ ایسے استعمال کریں، جن میں پانی آہستہ نکلتا ہو، ساتھ ہی نل سے لے کر پوری پائپ لائن تک پانی کا کہیں رسائو نہ ہو۔ استعمال شدہ پانی کو ری سائیکل کر کے بھی توانائی کی بچت کی جاسکتی ہے۔

مٹیریل کی ری سائیکلنگ

مکان مسمار کرنے یا تعمیر نو کے دوران جو کنکریٹ یا اسٹیل نکلتا ہے، اسے ری سائیکل کیا جا سکتا ہے۔ یہ عمل ماحول دوسست ہونے کے ساتھ لاگت کم کرنے میں بھی معاون ہوتاہے۔

ایل ای ڈی لائٹس لگائیں

LEDلائٹس 2سے 17واٹ تک بجلی خرچ کرتی ہیں، جس سے ایک تہائی بجلی کی بچت ہونے کے ساتھ بل بھی کم آتا ہے۔

تعمیرات سے مزید