آپ آف لائن ہیں
اتوار20؍ذیقعد 1441ھ 12؍جولائی 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

عزیز میمن قتل کیس‘ پولیس انتقامی کارروائی کر رہی ہے‘ مشتاق سہتو

اسلام آباد (خصوصی رپورٹ) ضلع خیر پور میرس سندھ سے تعلق رکھنے والے مشتاق احمد سہتو نے اپنے بھائی افشاد علی سہتو کے ساتھ نیشنل پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ معروف صحافی عزیز میمن قتل کیس کی تفتیش کی مد میں ہمارے گاؤں صوفائی سہتا کے لوگوں کو پریشان کر رکھا ہے جبکہ ہمارے گاؤں سے شہید صحافی عزیز میمن کا کوئی تعلق بھی نہیں ہے۔انہوں نے الزام لگایا کہ 23 مئی کو پولیس افسر کی سربراہی میں بڑی نفری جس میں کوئی بھی خواتین پولیس اہلکار نہیں تھی‘ نے میری بیوی (ض) کو اور میری بچیوں جو آٹھویں اور نویں جماعت میں پڑھتی ہے کو بغیر کوئی وجہ بتائے اغواءکر لیا جن کا آج تک کوئی پتہ نہیں چل رہا کہ وہ کہاں اور کس حال میں ہیں۔ اس کے علاوہ گاؤں کی بہت سی عورتیں اور مرد پولیس کی حراست میں ہیں۔ مشتاق احمد سہتو نے مزید کہا کہ پولیس کی جانب سے انتقامی کارروائی کی جارہی ہے اصل قاتلوں کو پکڑنے کی بجائے ہمارے گاؤں کے لوگوں اور ہمارے اہل خانہ کو چادر چار دیواری کے تقدس کی پامالی کرتے ہوئے خواتین پولیس نفری کے بغیر کسی اجازت نامے کے گھروں میں گھس کر اٹھا لیا جاتا ہے۔ اشتیاق احمد سہتو نے وفاقی حکومت وزیراعظم عمران خان‘ چیف جسٹس اور آرمی چیف سے انصاف کی اپیل کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اہل خانہ کو جلد از جلد بازیاب کروایا جائے اور اس واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے شہید صحافی عزیز میمن کے قتل کی اعلیٰ سطح کی انکوائری کرواتے ہوئے اصل ملزمان کو کیفر کردار پر پہنچاتے ہوئے ان کے اہلخانہ اور گاؤں کے دیگر لوگوں کو تحفظ اور انصاف فراہم کیا جائے۔
اہم خبریں سے مزید