آپ آف لائن ہیں
پیر14؍ ربیع الثانی1442ھ 30؍ نومبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

بلوچستان کے 31 اضلاع ٹڈی دل کی لپیٹ میں آگئے، سیکرٹری زراعت

بلوچستان کے سیکرٹری زراعت قمبر دشتی نے کہا ہے کہ صوبے کے 31 اضلاع ٹڈی دل کی لپیٹ میں آچکے ہیں، موجودہ صورتحال کے پیش نظر محکمہ زراعت میں ایمرجنسی لگا دی گئی ہے۔

جیو نیوز سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹڈی دل کو تلف کرنے کیلئے صوبے میں محکمہ زراعت کی 181ٹیمیں کام کررہی ہیں، 10اضلاع میں فضائی اسپرے کیلئے این ڈی ایم اے سے جہاز مانگا ہے۔

سیکرٹری زراعت قمبر دشتی نے بتایا کہ بلوچستان میں گزشتہ سال ایران اور بھارت سے آنے والی ٹڈی دل نے یہاں فصلوں کو نقصان پہنچانے کے ساتھ ساتھ انڈے بھی دیئے تھے، بارشوں کے بعد اب ان کی افزائش بھی ہوئی۔

انہوں نے کہا کہ رواں سال 19 مارچ کو ایران سے ٹڈی دل کا ایک اور لشکر بلوچستان میں داخل ہوا جو اب صوبے کے 31 اضلاع تک پہنچ گیا ہے۔

قمبر دشتی نے بتایا کہ صوبائی حکومت اور محکمہ زراعت کی ٹیمیں ٹڈی دل کو تلف کرنے اورصوبے میں زرعی علاقوں میں باغات اور فصلوں کو بچانے کیلئے ہرممکن کوششیں کررہی ہیں۔

سیکرٹری زراعت کا کہنا تھا کہ سروے کے بعد زرعی ٹیمیں تقریباً 3 میں سے ایک حصے پر موجود ٹڈی دل کو تلف کرچکی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ ٹڈی دل کے حملے سے ہونے والے نقصانات کا سروے جاری ہے جس میں کچھ وقت لگ سکتا ہے۔

قمبر دشتی کا کہنا تھا کہ بین الصوبائی سرحدی علاقوں میں ٹڈی دل کے خلاف مشترکہ کارروائی کیلئے بلوچستان حکومت کا دیگر صوبوں سے رابطہ ہے۔

سیکرٹری زراعت نے مزید بتایا کہ ٹڈی دل تلف کرنے والی ادویات خریدنے کیلئے این ڈی ایم اے اور صوبائی حکومت کی جانب سے فنڈز مہیا کردیئے گئے ہیں۔

قومی خبریں سے مزید