آپ آف لائن ہیں
جمعہ18؍ربیع الثانی 1442ھ 4؍دسمبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

میر شکیل الرحمٰن کی غیرقانونی گرفتاری کیخلاف مختلف شہروں میں احتجاج


پاکستان کے سب سے بڑے میڈیا گروپ جنگ اور جیو کے ایڈیٹر انچیف میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری کے خلاف ملک گیر احتجاج کا سلسلہ جاری ہے، جس میں شریک افراد نے میر شکیل الرحمٰن کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔

کراچی

کراچی میں جنگ بلڈنگ کے باہر ہونے والے احتجاج میں مسلم لیگ (ق) سندھ کے صدر طارق حسن، سیکریٹری اطلاعات سندھ ق لیگ محمد صادق شیخ، سیکریٹری اطلاعات مجلسِ وحدت المسلمین کراچی ناصر حسینی، سینئر صحافی شکیل یامین کانگا، رانا یوسف، دارا ظفر سمیت دیگر شریک ہوئے۔

اس موقع پر طارق حسن نے کہا کہ میر شکیل الرحمٰن کو فوری رہا کیا جائے۔

ناصر حسینی نے میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے ان کی فوری رہائی کا مطالبہ کیا۔

راولپنڈی

راولپنڈی جنگ بلڈنگ کے باہر احتجاج میں رہنما ن لیگ دانیال چودھری، سینئر صحافی ناصر زیدی، حنیف خالد، منیر شاہ، امجد عباسی، رانا غلام قادر سمیت سول سوسائٹی کے نمائندوں نے شرکت کی۔

اس موقع پر مظاہرین نے میر شکیل الرحمٰن کو فوری رہا کرنے کا مطالبہ کیا۔

لاہور

لاہور کے ڈیوس روڈ پر جاری احتجاجی کیمپ میں سینئر صحافی ظہیر انجم، شمسی محمود بلوچ، اویس قرنی، فاروق اعوان، محمد علی، عزیز شیخ، افضل عباس، منور حسین اور عائشہ اکرام سمیت دیگر نے میر شکیل الرحمٰن کی رہائی کے لیے نعرے لگائے۔

پشاور

پشاور میں سینئر صحافیوں اور میڈیا ورکرز نے میر شکیل الرحمٰن کی غیر قانونی گرفتاری کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا۔

کوئٹہ

میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری اور عدم رہائی کے خلاف کوئٹہ جنگ آفس کے باہر بھی احتجاج کیا گیا۔

بہاولپور

بہاولپور پریس کلب میں امین عباسی، آصف کبیر، عمران بھینڈر، حامد گلزار، وسیم قریشی، گوہر ملک اور دیگر نے میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری کے خلاف مظاہرہ کیا اور ریلی نکالی۔

نوابشاہ

میر شکیل الرحمٰن کی گرفتاری کیخلاف نواب شاہ میں بھی احتجاج کیا گیا۔

قومی خبریں سے مزید