• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

حسان نیازی کی اسپتال میں جھگڑےکی فوٹیج سامنے آگئی

لاہور کے شیخ زید اسپتال میں فارمیسی خالی کرانے کے معاملے پر جھگڑا کھڑا ہوگیا ، وزیراعظم عمران خان کے بھانجے حسان نیازی اور ان کے ساتھی وکلاء پولیس اور سیکیورٹی گارڈز سے الجھ پڑے، واقعے کی فوٹیج منظر عام پر آگئی، پولیس نے واقعہ کی رپورٹ بھی درج کرلی ہے ۔

شیخ زیداسپتال لاہور میں انتظامیہ کی جانب سے فارمیسی خالی کرانے کا معاملہ فوٹیج میں دیکھا جاسکتا ہے کہ حسان نیازی اور ان کے ساتھی وکلاء پولیس اور سیکیورٹی گارڈ سے جھگڑ پڑے جس کے بعد اضافی پولیس طلب کرلی گئی۔

انتظامیہ کے مطابق فارمیسی نجی کمپنی چلارہی تھی، کرایہ ادا نہ کرنے پرعدالت سےرجوع کیا جس نے فارمیسی خالی کرنے کا فیصلہ دیا، حسان نیازی اور ان کے ساتھیوں نے بدتمیزی کی اور 16 ملازمین کو زخمی کر دیا لیکن پولیس نے کوئی کارروائی نہیں کی۔

حسان نیازی کا کہنا ہےکہ وہ فارمیسی کاحکم امتناعی خارج ہونے پر اسپتال کےچیئرمین سے ملنے گئے تھے، اسپتال انتظامیہ نے پولیس اور بیلف کے بغیر فارمیسی کا سامان نکال کر باہر رکھ دیا تھا، فارمیسی پہنچا تو دھکم پیل ضرور ہوئی، لیکن مار پیٹ نہیں کی، اسپتال انتظامیہ نے ملازمین کے زخمی ہونے کا ڈرامہ رچایا ہے، ہم نے خود 15 پر کال کرکے پولیس کو بلایا تھا۔

دوسری طرف تھانہ مسلم ٹاؤن پولیس نےواقعہ کی رپورٹ درج کرلی ہے، رپورٹ کے مطابق 15 پرکال موصول ہونے کے بعد پولیس اسپتال پہنچی، جہاں اسپتال انتظامیہ کے چیئرمین متین اظہار اور ساتھیوں نے فارمیسی کا سامان نکال دیا تھا۔

دوسرافریق فرخ نیاز اور حسان نیازی 7 ساتھیوں ہمراہ پہنچے، حسان نیازی اور ساتھیوں نےمیڈیکل اسٹورکھولنے کی کوشش کی، جس کےبعد دونوں فریقین میں طے پایا کہ فارمیسی جہاں ہے جیسا ہے کی بنیاد پر رہے گی۔

قومی خبریں سے مزید