Advertisement

تعمیراتی صنعت میں ورچوئل ریالٹی کا استعمال

November 03, 2019
 

ورچوئل ریالٹی (VR) کے باعثدنیا اس وقت جن فوائد سے مستفید ہورہی ہے، چند برس پہلے ان کا تصور بھی محال تھا۔ ورچوئل ریالٹی کی وجہ سے اب آپ ایک پروجیکٹ کے مکمل ہونے سے پہلے ہی اس کی سیر کرسکتے ہیں اور ایک اینٹ رکھے جانے سے پہلے ہی اس پروجیکٹ کا انٹیریئر دیکھ سکتے ہیں۔ ورچوئل ریالٹی نے اب ممکن بنادیا ہے کہ آرکیٹیکٹ اور کلائنٹ حقیقی معنوں میں پروجیکٹ کے ڈیزائن پر شراکت دار کے طور پر کام کرسکیں۔

جیسے جیسے تعمیراتی ادارے ورچوئل ریالٹی کے شعبےمیں اپنی صلاحیتوں میں اضافہ کرتے جائیں گے، اس جدید ٹیکنالوجی کے فوائد میں اضافہ ہی ہوگا۔ ماہرین نے اس سلسلے میں Enscape نامی ایک انقلابی ’ریئل ٹائم رینڈرنگ ‘ سوفٹ ویئر تیار کیا ہے، جو تعمیراتی شعبے میں تصورات کو حقیقت کو روپ دے رہا ہے۔ اس بات کو صرف ایک آرکیٹیکٹ ہی سمجھ سکتا ہے کہ ایک پروجیکٹکے ڈیزائن کے معاملے میں کلائنٹ کو مطمئن کرنا کس قدر مشکل کام ہوتا ہے۔

بنیادی طور پر، ’اِنسکیپ‘ ایک پلگ اِن ہے، جو نہ صرف فوری طور پر اعلیٰ معیار کا ڈیزائن سسٹم پر رینڈر کرکے آپ کے سامنے پیش کرتا ہے (کلاؤڈ سپورٹکے بغیر) بلکہ آپ اس تیار ڈیزائن پر ریئل ٹائم میں مزید ترامیم بھی کرسکتے ہیں۔ اس عمل کے کئی فوائد ہیں اور آپ ہرممکن حد تک اس سے کس طرح زیادہ سے زیادہ فائدہ اُٹھا سکتے ہیں، آئیے جانتے ہیں۔

VRکو روزمرہ پریکٹس کا حصہ بنائیں

روایتی طور پر جب آرکیٹیکٹ کسی پروجیکٹکی ویژولائزیشن (Visualization) کے مرحلے میں جاتے ہیں تو اس دوران انھیں پروجیکٹ ڈیزائن پر مزید کام کو روکنا پڑتا ہے۔ تفصیلی رینڈرنگ میں گھنٹوں لگ جاتے ہیں لیکن اگر آپ فوری طور پر پروجیکٹ ڈیزائن کا جائزہ لینا چاہتے ہیں تو اس میں بہت ہی کم تفصیلات آپ دیکھ پاتے ہیں۔ ’اِنسکیپ‘ نے اس پُرانے اور وقت طلب (اور جدید دور میں کسی حد تک فرسودہ) عمل کو بدل کر رکھ دیا ہے اور آرکیٹیکٹس کو پروجیکٹ ڈیزائن کو ریئل ٹائم میںبیک وقت Visualizeکرنے اور اس پر مزید کام کرنے کی آزادی فراہم کی ہے۔

ریئل ٹائم میں تبدیلیاں دیکھیں

پروجیکٹڈیزائن میں، کلائنٹ کے مطمئن ہونے تک ایک ہی چیز آپ کو کئی بار کرنی پڑسکتی ہے، تاہم یہ کوئی آسان کام نہیں۔ ’ڈیزائن پراسیس‘ میں رینڈرنگ کے عمل سے سب سے زیادہ نفرت کی جاتی ہے کیونکہ اس دوران آپ کے کام پر ’بریک‘ لگ جاتا ہے اور آپ گھنٹوں رینڈرنگ کے مکمل ہونے کا انتظار کرتے ہیں۔ ’اِنسکیپ‘ نے اس سارے عمل کو بدل کر رکھ دیا ہے، اب آپ بیک وقت پروجیکٹ ماڈلنگ اور ویژولائزیشن کرسکتے ہیں، جس سے آرکیٹیکٹ اپنے کلائنٹ کو پروجیکٹڈیزائن کی تبدیلیاں ریئل ٹائم میں دِکھا سکتا ہے۔ آپ جیسے ہی ماڈل میں کسی چیز کا اضافہ یا کمی کرتے ہیں، تو فوری طور پر کمپیوٹر اسکرین پر اس کی ویژولائزیشن دیکھ سکتے ہیں۔

کوتاہیاں فوری نمایاں ہوتی ہیں

ریئل ٹائم ویژولائزیشن کا ایک فائدہ یہ بھی ہے کہ آپ پروجیکٹڈیزائن میں کسی بھی خامی کی فوری طور پر نشاندہی کرسکتے ہیں، جو بصورتِ دیگر کئی وجوہات کے باعث اکثر ممکن نہیں ہوتی۔ اس کی وجہ یہ ہے کہ روایتی طورپر ہر طرح سے مکمل پروجیکٹڈیزائن آپ کے سامنے پیش کیا جاتا ہے، جس کی تفصیلات اس قدر زیادہ ہوتی ہیںکہ ہر تفصیل پر نظر رکھنا ممکن نہیںہوتا۔

’اِنسکیپ‘ کا فائدہ یہ ہے کہ آپ کو پروجیکٹڈیزائن کی ویژولائزیشن ریئل ٹائم میں مل رہی ہوتی ہے، اس لیے آپ کسی بھی غلطی کی فوری طور پر نشاندہی کرسکتے ہیں۔ اس طرح، اب VR ٹیکنالوجی کے بعد کہا جاسکتا ہے کہ نئے تعمیراتی منصوبوں کے ڈیزائن میں کوئی بھیانک غلطی نظر نہیں آئے گی، جس کا خدشہ روایتی انداز میں کام کرنے میں بہرحال موجود رہتا ہے۔

تجربے سے لطف اندوز ہوں

روایتی انداز میں سب سے پہلے آرکیٹیکٹ کسی پروجیکٹکو ڈیزائن کرتا ہے، پھر اسے مکمل طور پر رینڈر ہونے کے بعد ہی مکمل شکل میں دیکھا جاسکتا ہے۔ اس وجہ سے ورچوئل ریالٹی استعمال کرنے والے کئی نئے صارفین غالباً یہ سوچتے ہوں گے کہ اس جدید ٹیکنالوجی کو استعمال کرنے کے لیے بھی قابلِ ذکر وقت اور کوآرڈینیشن درکار ہوگا، جوکہ حقیقت نہیں ہے۔ ’اِنسکیپ‘ میں تاخیر (Lag)کا کوئی تصور نہیں، اس کا مطلب یہ ہوا کہ دراصل آپ پروجیکٹ ڈیزائن ہونے کے عمل سے لمحہ بہ لمحہ لطف اندوز ہوتے ہیں۔

انتخاب آپ کے ہاتھ میں

ایسا ہوسکتا ہے کہ پروجیکٹ ڈیزائن کے ہر لمحے پر آپ کو تمام تفصیلات درکار نہ ہوں۔ اِنسکیپ میں آرکیٹیکٹ کے پاس اس بات کے انتخاب کا حق ہوتا ہے کہ وہ کسی بھی مرحلے پر کس قدر (کم یا زیادہ) تفصیلات دیکھنا چاہتا ہے۔

بنیادی شکل میں یہ آپ کو سادہ سی لیکن ہائی پرفارمنس تصاویر دِکھاتا ہے، جبکہ سب سے پیچیدہ شکل میںیہ اسٹیٹ آف دی آرٹ ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے حقیقت سے قریب تر تصاویر تمام تر تفصیلات کے ساتھ دِکھاتا ہے۔ یہ تمام تر آپشنز آپ VRسیٹنگ میں استعمال کرسکتے ہیں۔

’ڈرافٹ موڈ‘ ماڈل میں پروجیکٹڈیزائن میں شامل تمام اجزا دیکھے جاسکتے ہیں، تاہم اس میں لائٹنگ یا فِنشز شامل نہیں ہوتیں۔ ’میڈیم موڈ‘ میں آپ Non-VR ویژولائزیشن سیٹنگ (ڈیسک ٹاپ ویژولائزیشن) میںمجموعی طور پر تفصیلی گرافکس دیکھ سکتے ہیں۔

تاہم کلائنٹ کو پروجیکٹ کی پریزنٹیشن دیتے وقت یا اپنی ٹیم کے ساتھ پروجیکٹکا جائزہ لیتے وقت ’ہائی‘ اور ’الٹراموڈ‘ میں جانا بہتر رہتا ہے، جہاںآپ پروجیکٹ ڈیزائن کو VRسیٹنگمیں اس طرح دیکھتے ہیں، جیسے کہ آپ ذاتی طور پر پروجیکٹ کی سیر کررہے ہوں۔


مکمل خبر پڑھیں