جو امام سورۂ فاتحہ کے بعد سورت نہ پڑھے؟

November 29, 2019
 

آپ کے مسائل اور اُن کا حل

سوال :۔میں مسقط عمان میں ملازمت کرتا ہوں ، یہاں پر ظہر اور عصر کی نماز میں امام صاحب سورۂ فاتحہ کے بعد کوئی سورت نہیں پڑھتے، بلکہ چاروں رکعات میں بس فاتحہ ہی پڑھتے ہیں۔ کیا ہمیں ایسے امام کے پیچھے نماز پڑھ لینی چاہیے ،جماعت کا ثواب حاصل کرنے کے لیے یا اکیلے پڑھنی چاہیے؟(محمد عرفان ظفر خاں مسقط ،عمان)

جواب:۔ اگر مذکورہ امام صاحب مستقل ظہر اور عصر کی نماز میں صرف سورۂ فاتحہ پر ہی اکتفاٰء کرتے ہیں تو ان کے پیچھے نماز درست نہیں ۔آپ کوئی ایسی مسجد تلاش کریں جو سورۂ فاتحہ کے بعد کوئی سورت یا آیات بھی پڑھتا ہو۔ اگر دوسری جگہ بھی ایسا ممکن نہ ہو توپھر تنہا نماز پڑھ لیا جائے ۔(ہندیہ،الباب الثانی عشر فی سجود السہو،1/139،ط:دارالکتب العلمیہ)