سینٹرل کنٹریکٹ سے باہر کرکٹرز بھی ٹیم میں آسکتے ہیں، مصباح الحق

May 22, 2020

کراچی(عبدالماجد بھٹی/ اسٹاف رپورٹر)پاکستان کرکٹ بورڈ کے سینٹرل کنٹریکٹ سے باہر ہونے کے بعد فاسٹ بولر وہاب ریاض اور محمد عامرناراض ہیں ۔ انہوں نے فیصلے کے خلاف خاموش احتجاج کرتے ہوئے کرکٹ ٹیم کے فٹنس واٹس ایپ گروپ سے اپنا نام باہر نکال لیا۔ ٹیم کے ہیڈ کوچ مصباح الحق نے نمائندہ جنگ سے انٹرویو میں بتایا کیا کہ دونوں کھلاڑیوں نے غلط فہمی میں گروپ چھوڑ دیا تھا دونوں جلد اس گروپ کا حصہ ہوں گے۔ دونوں کا خیال ہے کہ یہ فٹنس گروپ صرف سینٹرل کنٹریکٹ والے کھلاڑیوں کے لئے مخصوص ہے۔ اس گروپ میں ہر کھلاڑی کو فٹنس کے بارے میں پروگرام سے آگاہ کیا جاتا ہے جبکہ جدید ڈیجیٹل گھڑی سے ہمارے پاس ہر کھلاڑی کی فٹنس کا ریکارڈ موجود ہوتا ہے۔ اس گھڑی کی مدد سے کھلاڑی دنیا میں جہاں بھی ہوتا ہے جتنی ٹریننگ کرتا ہے ہمارے پاس اس کا ریکارڈ آجاتا ہے ۔ واضح رہے کہ بدھ کو انگلینڈ کے دورے کے حوالے سے پاکستان کرکٹ بورڈ نے کھلاڑیوں کے لئے جس آن لائن بریفنگ کا اہتمام کیا تھا اس میں بھی شعیب ملک، محمد حفیظ، وہاب ریاض اور محمد عامر مدعو نہیں تھے۔ مصباح الحق نے کہا کہ میں خود دونوں سے بات کرکے اس غلط فہمی کو دور کردوں گا۔ پاکستان ٹیم منتخب کرتے وقت بھی ان کے ناموں پر غور کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ چند ہفتے پہلے ہم نے آسٹریلیا سے تیس ڈیجیٹل گھڑیا ں منگوائی ہیں اور یہ گھڑیاں سینٹرل کنٹریکٹ والےکھلاڑیوں کے پاس ہیں۔ کوئی سینٹرل کنٹریکٹ میں نہیں ہے تو اس کا قطعی یہ مطلب نہیں ہے کہ وہ ہمارے پلان کا حصہ نہیں ہے۔ دو نوجوان فاسٹ بولروں کو سینٹرل کنٹریکٹ میں جگہ دینے کے لئے محمد عامر اور وہاب ریاض کو سینٹرل کنٹریکٹ نہیں دیا گیا تھا۔ عامر،وہاب ریاض،شعیب ملک ،محمد حفیظ اور کامران اکمل سمیت کو ئی بھی کھلاڑی پاکستان ٹیم میں جگہ بناسکتا ہے۔ محمدعامر اور وہاب ریاض کی جانب سے بھی محدود طرز کی کرکٹ پر توجہ دینے کے اعلان کے بعد یہ فیصلہ درست ہے۔ واضح رہے کہ محمد عامر نے مکی آرتھر کو اپنا پسندیدہ کوچ قرار دیا تھا۔