• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

قومی اسمبلی، حکومت کو شکست، ن لیگی رکن کا بل پیش کرنے پر اپوزیشن کو 104 کے مقابلے میں 117 ارکان کی حمایت حاصل

قومی اسمبلی، حکومت کو شکست


اسلام آباد (جنگ نیوز،ٹی وی رپورٹ، ایجنسیاں) قومی اسمبلی میں اپوزیشن نے بل پیش کرنے کے معاملے پر حکومت کو 104ووٹ کے مقابلے میں 117ووٹ سے شکست دیدی۔ 

ایاز صادق نے کہا کہ حکومت کو بدترین شکست ہوئی ہےجوائنٹ سیشن سے پہلے ہی حکومت اپنی اخلاقی ہار مان لے، آج حکومت کو مستعفی ہونا چاہیے۔منگل کو مسلم لیگ (ن) کے رکن جاوید حسنین نے بل پیش کرنا چاہا تو حکومت نے مخالفت کی۔ 

اسپیکر نے بل پیش کرنے کیلئے ووٹنگ کرائی تو ووٹنگ میں اپوزیشن کے 117 ارکان نے بل پیش کرنے کے حق میں اور حکومت کے 104 ارکان نے مخالفت میں ووٹ دیا۔ اکثریتی ارکان کے سبب ن لیگ کے رکن کو بل پیش کرنے کی اجازت مل گئی اور حکومتی ارکان کو شکست ہوئی۔ 

جاوید حسنین نے کہاکہ یہ بل جمہوریت اور جماعتوں کی مضبوطی کیلئے ضروری ہے، جسکی مرضی ہوتی تھی وہ پرندہ اڑ کر کہیں بھی بیٹھ جاتا تھا۔جاوید حسنین نے کہاکہ ہماری شاخ سے پرندے اڑتے رہے ہیں اب کم از کم پی ٹی آئی اپنی شاخیں بچا لے، بل کے تحت کسی بھی ایسے شخص کو جو پارٹی چھوڑے اس کی 7 سال تک کسی اور پارٹی ٹکٹ پر الیکشن لڑنے پر پابندی ہونی چاہیئے۔

اس لوٹا کریسی صنعت کو اب بند ہونا چاہیے۔ انہوں نے کہاکہ یہ لوٹے اتنے مضبوط ہیں تو اپنے بل بوتے پر الیکشن جیتیں اور آکر دکھائیں، جماعتوں کو کیوں بدنام کرتے ہیں، اپوزیشن ارکان نے بل کی تحریک منظور ہونے پر جاوید حسنین کو مبارکباد ی ۔ 

مسلم لیگ (ن) کے رکن ایاز صادق نے کہا کہ حکومت کو بدترین شکست ہوئی ہے، آج حکومت کو مستعفی ہونا چاہیے۔سابق اسپیکر سر دار ایازصادق نے کہاکہ جوائنٹ سیشن سے پہلے ہی حکومت اپنی اخلاقی ہار مان لے،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے ایاز صادق کے الفاظ کو مسترد کردیا انہوں نے کہاکہ ایم این اے لاہور کے الفاظ کو مسترد کرتا ہوں۔ 

اجلاس کے دور ان اظہار خیال کرتے ہوئے احسن اقبال نے کہاکہ لاہور میں ڈینگی کا بدترین مسئلہ پیدا ہوگیا ہے،محکمہ صحت کے اسٹاک سے تین کروڑ ادویات غائب ہوگئی ہیں،لاہور میں پیناڈول اور پیراسیٹامول غائب ہوچکی ہیں،حکومت عوام کی مشکل حل کرے۔ انہوں نے کہاکہ عوام ڈینگی سے مر رہے ہیں اور حکمران قوالیاں سن رہے ہیں۔

اہم خبریں سے مزید