• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

سندھ اسمبلی میں رہائشی عمارتوں کے تحفظ کی قرارداد کثرت رائے سے منظور


سندھ اسمبلی میں رہائشی منصوبوں کو گرانے سے بچانے کے لیے قرارداد کثرت رائے سے منظور کرلی گئی۔ اپوزیشن نے قرارداد کے خلاف احتجاج کیا اور اس کی کاپیاں پھاڑ دیں۔

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) پاکستان کے رکن اسمبلی محمد حسین نے کہا کہ صوبائی وزیر ناصر حسین شاہ نے اپوزیشن سے کہا کہ نسلہ ٹاور پر قرارداد لارہے ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت کی پوری قرارداد میں نسلہ ٹاور کا کہیں ذکر تک نہیں ہے۔

تحریک انصاف کے خرم شیر زمان نے کہا کہ نسلہ ٹاور کے معاملے پر جذبات اور دو نمبری کا سہارا نہ لیا جائے۔

صوبائی وزیر سعید غنی نے کہا کہ قرارداد میں صرف عمارتوں کو تحفظ نہیں دیا گیا بلکہ ملوث افراد کے خلاف کارروائی کا بھی کہا گیا ہے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ چھت چھن جانے کی فکر میں مبتلا لوگوں کے لیے یہ قرارداد امید کی کرن ہے، جس میں عمارتیں ریگولرائز کرنے کی قانون سازی کا مطالبہ ہے۔

قومی خبریں سے مزید