آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
ہفتہ 7؍ربیع الثانی 1440ھ 15 ؍دسمبر2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


چین کے سرد ترین شہر ہربن میں35ویں سالانہ آئس اینڈ اسنوفیسٹیول کی تیاریاں زور و شور سے جاری ہیں جس کے دروازے عوام کیلئے22دسمبر سے کھول دئیے جائینگے

برف کا یہ منفرد میلہ دنیا کے چار عظیم اسنو فیسٹیولز میں سے ایک ہے جس میں ہر سال چین اور دنیا بھر سے برف کے سینکڑوں مجسمہ ساز اور آرٹسٹ جمع ہوکر خوبصورت شاہکار تخلیق کرتے ہیں اسی مقصد کیلئے ورکرز نے ہربن کے دریا کی سطح سے برف کے ایک لاکھ پچاس ہزار کیونک میٹر کے دیوہیکل ٹکڑے کاٹ کر میلے کے مقام پر پہنچانے کا بھی آغاز کر دیا ہے جس کے لئے انہیں سخت موسم کا سامنا کرنے کے ساتھ ساتھ نہایت محنت بھی کرنی پڑرہی ہے ۔

رواں سال اس میلے کو حتمی شکل دینے کیلئے10ہزارسے زائد ورکرز اورسینکڑوں آرٹسٹ میدان میں موجود ہونگے اور 6لاکھ اسکوائرمیٹر رقبے پر کئی میٹر اونچے ٹاورز اور شاندار آئس سلائیڈ کے علاوہ سینکڑوں برفیلے مجسمے تیار کرتے دکھائی دینگے جبکہ شاہکار مجسموں کی تیاری کا سلسلہ بھی برف کے دیوہیکل ٹکڑے پہنچنے کے بعد شروع ہوجائیگا ۔

یہ برفانی میلہ ہر سال تقریباً ڈیڑھ سے دو ماہ تک چین کے شہر ہربن میں جاری رہتا ہے جہاں فروری کے اختتام تک سیاحوں کی بڑی تعداد برف سے بنائے گئے مجسمے اورآرٹ کے انمول نمونے دیکھنے جمع ہوتی ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں