آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر 13؍شوال المکرم 1440ھ17؍جون 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی نعیم الحق نے کہا ہے کہ علیمہ خان کو جائیداد کلیئر کرانے کےلئے پیغام دے دیا گیا، ن لیگ اور پی پی قیادت کیسز میں نرمی مانگتی ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام نیا پاکستان میں گفتگو کرتے ہوئے نعیم الحق نے کہا کہ مہنگائی کے حوالے سے ہمارے پاس لسٹ ہے کہ جن اشیا کی قیمتوں میں اضافہ نہیں ہوا،مارکیٹ میں سبزی وافر مقدار میں موجود ہے۔

انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن اور پی پی قیادت سمجھوتے کےلئے پیغامات بھیجتی ہے،جس میں کہا جاتا ہے کہ معاملات ختم کریں، کیسز میں نرمی برتیں، ہم آپ کی حمایت کریں گے۔

نعیم الحق نے یہ بھی کہاکہ کسی سے بھی کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، میں پیغامات بھیجنے والوں کے نام نہیں بتاسکتا۔

ان کا کہنا تھا کہ نظام میں خرابی کی وجہ سے ایک دن میں کام ہونے کے بجائے کئی دن لگ جاتے ہیں، شہباز شریف کو چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی بنانے سے دیگر کمیٹیوں نے کام شروع کردیا ہے۔

وزیراعظم کی ہمشیرہ سے متعلق گفتگو میں کہا کہ عمران خان کا بہن علیمہ خان کے کاروبار سے کوئی تعلق نہیں اور انہیں علیمہ خان کے اثاثوں کا بھی علم نہیں۔

نعیم الحق کا کہنا تھا کہ عمران خان کبھی قانون کی راہ میں رکاوٹ نہیں بنیں گے کیوں کہ انہوں نے پہلے دن سے کہہ دیا تھا احتساب کے معاملے میں کوئی امتیازی سلوک نہیں ہونا چاہیے۔

انہوں نے کہا کہ علیمہ خان خود ان سوالات کا جواب دیں گی اور میرے خیال ہے کہ انہیں پیغام دیا گیا کہ وہ جائیداد کا معاملہ کلیئر کریں۔

ان کا کہنا ہے کہ حکومتی ذرائع کا غلط استعمال کرنے کی کسی کی ہمت نہیں، عمران خان تمام کمائی پاکستان لے کر آئے لہٰذا ایک پائی بھی باہر نہیں۔

پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ نئے بجٹ میں کوئی ٹیکس عائد نہیں کیا جارہا، نئے بجٹ میں پاکستان میں بزنس آسان کرنے سے متعلق چیزیں ہوں گی۔

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ ملٹری کورٹس معاملے پر بحث جاری ہے اور جلد فیصلہ کرلیا جائے گا۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں