آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل17؍شعبان المعظم 1440ھ 23؍ اپریل 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ بدقسمتی سے سیاسی مداخلت سے سول سروس کا زوال شروع ہوا، ہماری حکومت کا مشن ہے کہ بیوروکریسی کو سیاسی مداخلت سے بچایا جائے۔احتساب اور میرٹ ہی نظام میں بہتری لانے کے اصول ہیں۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت سول سروس ریفارمز ٹاسک فورس کا اجلاس ہوا، اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ سول سروس کو سیاسی مداخلت سے بچانے کیلئےسیاستدانوں کی ٹریننگ بھی ضروری ہے، کیونکہ کہ بیوروکریٹ بلا خوف و خطرذمہ داریاں انجام دیں۔

انہوں نے کہا کہ سرکاری اداروں کے بورڈز میں اچھی شہرت اور اہل افراد کو شامل کیا جارہا ہے،اسپیشلائزیشن کا دور ہے، ہر شعبے میں ماہر افراد ہی کام کرسکتے ہیں۔

وزیر اعظم نے کہا کہ ایسا ماڈل لا رہے ہیں کہ مقامی نمائندے عوامی فلاح و بہود میں بھرپور کردار ادا کریںگے۔

انہوں نے مزید کہا کہ 60اور 70کی دہائی میں پاکستانی سول سروس خطےکی سب سےبہترین سروس تھی ، خطے کے دیگر ممالک ہم سے سیکھنے آتے تھے۔

وزیراعظم نے کہا کہ خیبر پختونخوا میں ہماری حکومت سروس کی انتظامی ڈھانچے میں تبدیلیاں لائی،تبدیلیوں کی وجہ سے خیبر پختونخوا کی گورننس میں بہتری آئی ،سول سرونٹس کو بے جا تنگ کرنے سے کام رک جاتا ہے،پوسٹ پر مدت ملازمت کو تحفظ فراہم کیا جائے گا تاکہ ڈیلیوری میں تسلسل قائم رہے۔

انہوں نے کہا کہ سرکاری اداروں کے بورڈزمیں اچھی شہرت اور اہل افراد کو شامل کیا جارہا ہے،تعلیم اورصحت کے شعبے سب سے زیادہ اہمیت کے حامل ہیں،وسائل کے ضیاع کو روکنا ہوگا،اسپیشلائزیشن کا دور ہے ، ہر شعبے میں ماہر افراد ہی کام کرسکتے ہیں،ترقی یافتہ ممالک میں ایک قدر مشترک ہےوہاں میرٹ پر بھرتی ہوتی ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں