آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
اتوار15؍محرم الحرام 1441ھ 15؍ستمبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بیوی کے صبح شام لڈو کھلانے پر ایک بھارتی شخص نے فیملی کورٹ میں طلاق کے لیے اپیل دائرکر دی ۔

بھارتی ریاست اترپردیش کےضلع میرٹھ کے رہائشی نے فیملی کورٹ میں طلاق کی اپیل کرتے ہوئے بتایا کہ اُس کی بیوی ایک تانترک ( جادو ٹونے کرنے والا) کے کہنے پر اُسے 4 لڈو صبح اور 4 لڈو شام میں دیتی ہے جبکہ اس دوران اُسے کچھ کھانے کی اجازت نہیں ہے۔

شوہر کا کہنا ہے کہ ہماری شادی کو 10 سال گزر گئے ہیں اور ان کے 3 بچے بھی ہیں۔

انہوں نے مزید کہا کہ میں کچھ عرصہ بیمار رہا تھا ، میری بیوی پریشان ہو کر ایک تانترک کے پاس گئی تھی جس نے کہا تھا کہ وہ مجھے بس کھانے میں لڈو ہی دیے جائیں۔

فیملی کونسلنگ سینٹر کے عہدیداروں کا کہنا ہے کہ یہ ہمیں طلاق لینے کے لیے یہ ایک بہانہ لگ رہا ہے۔

فیملی کونسلر نے مزید کہا کہہم جوڑے کو بلا کر اُن کی مدد کرنے کی کوشش کریں گے، مگر ان کی توہم پرست بیوی کو سمجھانا بہت مشکل ہو گا ، وہ بہت پختہ یقین رکھتی ہے کہ اس کے شوہر کا علاج صرف لڈو کھانے میں ہی ہے، علاج کی کوئی دوسری صورت وہ قبول کرنے کو تیار نہیں ۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید