آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
جمعہ24؍ ربیع الاوّل 1441ھ 22؍ نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

پیارےساتھیو! دنیا عجیب و غریب اور خوبصورت مقامات سے بھری پڑی ہے، اسی دنیا میں کچھ ایسے مقامات بھی موجود ہیں، جو انسانوں کو دنگ کردیتے ہیں۔ قطب جنوبی میں واقع دنیا کے سرد اور خشک ترین براعظم انٹارکٹیکا برف کا صحرا ہے اوریہاں کسی آبشار کا پایا جانا یقیناً حیرت انگیز بات ہے۔ 

میک مرڈو وادی میں پائے جانے والے، اس آبشار کا نام خون کا آبشار ہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ اس جھیل میں سطح سے 400 میٹر کی گہرائی پر بیکٹیریا بھی پائے جاتے ہیں جو اس قسم کے شدید ماحول میں بھی زندہ رہتے ہیں۔

ماہرین کا کہنا ہے کہ لاکھوں سال پہلے یہاں نمک کی جھیل بن گئی تھی، جو آہستہ آہستہ برف کے تلے دبتی چلی گئی اور ان جھیلوں کا پانی عام سمندری پانی سے تین گنا نمکین ہے، جس کی وجہ سے ان کا پانی جم نہیں سکتا اور آبشار کی صورت میں برف سے باہر آتا رہتا ہے۔

جھیل کی سطح پر آئرن موجود تھا لہٰذا جب پانی باہر آتا ہے تو اس میں آئرن بھی موجود ہوتا ہے جو آکسیجن کے ساتھ مل کر زنک جیسا مادہ اور رنگ پیدا کردیتا ہے ،جس سے یہ آبشار سرخ نظر آتی ہے۔