آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل 21؍ربیع الاوّل 1441ھ 19؍نومبر 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

انتخابی مہم میں ہیلتھ سروس کو سیاسی ہتھیار نہ بنایا جائے، این ایچ ایس

لندن (پی اے) این ایچ ایس کے سربراہان نے سیاسی رہنمائوں سے کہا ہے کہ وہ انتخابی مہم کے دوران ہیلتھ سروس کو سیاسی ہتھیار نہ بنائیں۔ این ایچ ایس پرووائیڈرز کے سربراہ کرس ہوپسن نے کہا کہ این ایچ ایس کو درپیش مشکلات کو ڈرامائی شکل دے کر یا اس کی فنڈنگ کے بارے میں دعوئوں سے این ایچ ایس کی کوئی مدد نہیں ہوسکتی، ٹوری اور لیبر دونوں پارٹیاں این ایچ ایس کی کارکردگی بہتر بنانے کیلئے اربوں پونڈ خرچ کرنے کا دعویٰ کر رہی ہیں لیکن انگلینڈ میں ہیلتھ ٹرسٹ کے قائد کا کردار ادا کرنے والے ہوپسن نے دونوں پارٹیوں کو مشورہ دیا ہے کہ وہ خالی خولی دعوے نہ کریں اور غیر حقیقی توقعات پیدا کرنے سے گریز کریں، عام طورپر توقع کی جارہی ہے کہ 12 دسمبر کو ہونے والے انتخابات کیلئے انتخابی مہم کے دوران این ایچ ایس اور سوشل کیئر کے شعبے کلیدی طور پر زیر بحث رہیں گے۔ توقع کی جاتی ہے کہ ٹوریز انگلینڈ میں ہیلتھ سروسز پر اضافی اخراجات کو مہم کے دوران اجاگر کرے گی، جس میں اگلے 5 سال کے دوران انگلینڈ کے 6 ہسپتالوں کیلئے 2.7 بلین پونڈ

کی فراہمی اور مزید 34 ہسپتاالوں کے مستقبل کے ترقیاتی منصوبوں کیلئے 100 ملین پونڈ کی فراہمی کا منصوبہ شامل ہے۔ تھریسا مے حکومت کی جانب سے 2023 تک 20 بلین پونڈ کی فراہمی کا وعدہ اس میں سرفہرست ہے۔ دوسری جانب لیبر پارٹی کا کہنا ہے کہ این ایچ ایس 2010 سے جدید دور کی تاریخ کے فنڈنگ کی شدید قلت کی صورت حال سے دوچار ہے، جس کی وجہ سے لیبر کے مطابق کم وبیش ساڑھے 4 ملین افراد کو علاج کیلئے طویل انتظارکی صبر آزما صورت حال سےگزرنا پڑتا ہے۔ لیبر نے الزام عائد کیا ہے کہ گزشتہ سال ہزاروں افراد کے آپریشن منسوخ کئے گئے۔ جیرمی کوربن نے دعویٰ کیا ہے کہ لیبر پارٹی این ایچ ایس کیلئے مناسب فنڈز کی فراہمی کے ذریعے کفایت شعاری کا خاتمہ کرے گی۔ انھوں نے بتایا کہ اس حوالے سے تفصیلات کا پارٹی منشور میں اعلان کیا جائے گا۔ ہوپسن کا کہنا ہے کہ این ایچ ایس کی ضروریات کے حوالے سے مناسب، بالغ نظری پر مبنی اور شواہد کی بنیادپر بحث کرنے کی ضرورت ہے۔ انھوں نے کہا کہ اس مسئلے پر سستے سیاسی نعروں سے گریز کیا جائے، جس کا ہم گزشتہ 5-4 انتخابات کے دوران مشاہدہ کرتے رہے ہیں۔ ٹائمز کی ویب سائیٹ پر انھوں نے لکھا ہے کہ یہ ایک عام فہم بات ہے کہ انتخابی مہم کے دوران سیاستداں خود کو این ایچ ایس کا چیمپئن اور اس کادفاع کرنے والا ثابت کرنے کی کوشش کرتے ہیں۔ انھوں نے متنبہ کیا کہ این ایچ ایس کو سیاسی ہتھیار کے طورپر استعمال کرنے کے منفی نتائج برآمد ہوسکتے ہیں۔

یورپ سے سے مزید