آپ آف لائن ہیں
پیر12؍ذی الحج 1441ھ 3 اگست 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

وزیراعظم کی مولانا فضل الرحمان پر تنقید

وزیراعظم کی مولانا فضل الرحمان پر تنقید


وزیر اعظم عمران خان نے ہزارہ موٹر وے کی افتتاحی تقریب کے موقع پر جمعیت علماء اسلام (ف) کے امیر مولانا فضل الرحمان کو بھی شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔

عمران خان کا کہنا تھا کہ ایک شخص اپنے آپ کومولانا کہتا ہے اور دین کے نام پر سیاست کررہا ہے ۔

وزیراعظم کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اگر کوئی دھرنے کا ایکسپرٹ ہے تو میں ہوں۔

انہوں نے کہا کہ کنٹینر پر ایک سرکس ہوئی، آپ کو پتہ ہے کہ پاکستان میں اگر کوئی دھرنے کا ایکسپرٹ ہے تو وزیراعظم نے اپنی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہا کہ وہ یہاں کھڑا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ میں نے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ ایک مہینہ کنٹینر پر گزار دیں ، میں ان کی ساری باتیں مان جاؤں گا۔

عمران خان نے خطاب کے دوران شریف برادران اور بلاول بھٹو زرداری پر بھی کڑی تنقید کی۔

اُن کا کہنا تھا کہ ہم نے تو گارنٹی کے طور پر صرف کاغذ کا ٹکڑا مانگا تھا اور جانے کی اجازت دے دی تھی ،شہباز شریف نے کہا میں اپنے بھائی کی گارنٹی دیتا ہوں ۔

وزیراعظم نے کہاکہ شہباز شریف آپ کا بیٹا اور داماد فرار ہیں، آپ پر بھی کیسز ہے ، ان سب کی گارنٹی کون دے گا؟ نواز شریف کا سمدھی اور دو بیٹے بھی ملک سے بھاگے ہوئے ہیں،یہ اربوں روپے کے محلوں میں رہتے ہیں۔

عمران خان نے کہا کہ اپوزیشن لیڈر شہباز شریف ڈرامے باز ہیں جبکہ پیپلز پارٹی چیئرمین بلاول بھٹو لبرل نہیں وہ لبرلی کرپٹ ہیں۔

قومی خبریں سے مزید