آپ آف لائن ہیں
جمعہ9؍ شعبان المعظم1441ھ 3؍اپریل 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

5 پاؤنڈ کا سکہ 10 کروڑ روپے میں فروخت

5 پاؤنڈ کا سکہ 10 کروڑ روپے میں فروخت


اگر کوئی چیز مہنگے داموں فروخت ہوجائے تو بیچنے والے کو اچھا منافع مل جاتا ہے، لیکن اگر قیمت حیرت انگیز طور پر زیادہ ہوجائے تو اسے کیا کہیں گے؟

ایسا برطانیہ میں دیکھنے میں آیا جب 5 پاؤنڈ کی مالیت کا ایک سکہ 5 لاکھ 32 ہزار پاؤنڈ (تقریباً 10 کروڑ 72 لاکھ سے زائد پاکستانی روپے) میں فروخت ہوگیا۔

یہ ایک طلائی سکہ ہے جو برطانیہ کے زمانہ وکٹوریہ کا ہے جسے 1839 میں جاری کیا گیا تھا۔

اس سکے میں وکٹوریا یونا اور ایک شیر بنا ہوا ہے جبکہ اس میں ملکہ وکٹوریہ کو ایک 20 سالہ خاتون کے روپ میں دکھایا گیا ہے اور شیر کو سلطنت برطانیہ سے مشابہت دی گئی ہے۔

ایڈمنڈ اسپینسر کی لکھی ہوئی نظم ’دی فیری کوئین‘ سے مشابہت دیتے ہوئے ملکہ وکٹوریہ کو یونا کی طرح دکھایا گیا ہے۔

یہ سکہ شاہی کندہ کار ولیم ویون نے تیار کیے تھے، جو رائل منٹ کے چیف کندہ کار تھے، انہوں نے اپنی زندگی میں ایسے صرف 400 طلائی سکے بنائے تھے، تاہم اس سکے کو برطانیہ کے سب سے خوبصورت سکوں میں سے ایک قرار دیا گیا ہے۔

متعلقہ سکے کو امریکا کی ریاست ٹیکساس میں موجود ایک نیلام کرتا فرم نے نیلامی میں فروخت کیا۔

اس سکے کو مختلف افراد نے پسند کیا اور انہوں نے اس کی بولی بھی لگائی لیکن ایک خریدار نے 5 لاکھ 30 ہزار پاؤنڈ سے زائد کی بولی لگا کر اسے خرید لیا۔

اس سکے کی فروخت کے لیے ایک لاکھ 90 ہزار پاؤنڈ کی رقم کا اندازا لگایا جارہا تھا، تاہم اس نے اسی دور کے ایک سکے جو 2017 میں 4 لاکھ 21 ہزار پاؤنڈ میں فروخت ہوا تھا، کا ریکارڈ بھی توڑ دیا۔

دلچسپ و عجیب سے مزید
خاص رپورٹ سے مزید