آپ آف لائن ہیں
منگل13؍شعبان المعظم 1441ھ 7؍اپریل2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

مکانات میں چھت، پیٹیو (patio)اور صحن موجود ہوتے ہیں اور مکین اپنی پسند اور ضرورت کے مطابق انھیں مختلف مقاصد کے لیے استعمال کرتے ہیں۔ لیکن یہ تمام آسائشات مکانوں میں رہنے والے افراد کو ہی میسر آتی ہیں، اس کے برعکس اپارٹمنٹس میں رہنے والوں کے لیے ’بالکونی‘ ہی آؤٹ ڈور ایریا ہوتا ہے۔

عام طور پر بالکونی اپارٹمنٹس کے بیرونی حصے میں موجود ایک چھوٹی سی جگہ ہوتی ہے جو بیک وقت مختلف فوائد کا باعث بنتی ہے۔ ایک مصروفیت بھرا دن گزارنے کے بعد کھلی فضا میں سانس لینے یا پھر شام کی چائے پیتے ہوئے باہر کے خوبصورت اور پر تکلف مناظر سے لطف اندوز ہونے کے لیے بالکونی سے بہتر کوئی جگہ نہیں ہوتی۔ لیکن فائدہ تب ہی ہوتا ہے جب بالکونی چند خاص اصولوں کو پیش نظر رکھتے ہوئے ڈیزائن کی جائے۔ آئیے آج کے مضمون میں ان اصولوں کو جاننے کی کوشش کرتے ہیں ۔

آب وہوا

کسی بھی ملک کی آب و ہوا کے اعتبار سے بالکونی کا استعمال بھی مختلف ہوسکتا ہے۔ سرد آب و ہوا والے علاقوں مثلاً شما ل مشرقی امریکا، یورپ، کینیڈا جبکہ پاکستان جیسے گرم اور مرطوب علاقے میں بالکونی سے مختلف فوائد حاصل کیے جاسکتے ہیں۔ 

چنانچہ بالکونی کا ڈیزائن ،سائز حتیٰ کہ افعال بھی آب و ہوا کے لحاظ سے الگ ہو سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر گرم آب و ہوا والے علاقوں میں یہ کمروں کو حرارت سے محفوظ رکھتے ہوئے ٹھنڈا رکھنے کا باعث بنتی ہے (لیکن اس بات کا انحصار بالکونی کی سمت پر ہے)۔ 

مشرق کی سمت تعمیر کی جانے والی بالکونی میں سردیوں کی صبح کافی خوشگوار محسوس ہوتی ہے جبکہ مغرب یا شمال کی سمت تعمیر کروائی گئی بالکونی موسم گرما کے دوران شام سے قبل آرام دہ نہیں ہوتی، اس کے علاوہ بارش یا مون سون کے دوران بھی ان بالکونیز میں پانی آجانے کا امکان ہوتا ہے، جس کی وجہ سے کافی احتیاط برتنی پڑتی ہے۔ ایسی صورت میں ان بالکونیز میں نکاسی آب کا بہتر انتظام ہونا ضروری ہے، بصورت دیگر پانی بالکونی سے کمرے کے اندر بھی داخل ہوسکتا ہے ۔

دستیاب جگہ پر غور کریں

یہ آپ پر منحصر ہے کہ بالکونی کے لیے دستیاب جگہ پر غور کرتے ہوئے اسے کس طرح ڈیزائن کرنا چاہتے ہیں۔ ڈیزائننگ کرتے وقت اس بات کو یقینی بنائیں کہ بالکونی مکان کا حصہ ہی نظر آئے نہ کہ علیحدہ سے کوئی جگہ۔

گھروں اور کمروں کی اقسام کے پیش نظر

بالکونی ایک ایسی جگہ ہے جہاں آپ اپنے دوستوں اور اہل خانہ کے ساتھ مل کر باربی کیو پارٹیز یا چائے کافی کا اہتمام کرسکتے ہیں۔ اگر آپ کے گھر میں کوئی آؤٹ ڈور ایریا نہیں ہے تو آپ بالکونی کے سائز کو مد نظر رکھتے ہوئے اس جگہ کو استعمال میں لاسکتے ہیں لیکن یہاں بھی بالکونی کی ڈیزائننگ مکان کے سائز کے لحاظ سے مختلف ہوگی۔

مواد کون سا استعمال کیا جائے؟

گھر کے بیرونی حصوں میں موسم کے نقصان دہ اثرات پڑنے کا خدشہ سب سے زیادہ ہوتا ہے۔ بالکونی کے لیے عموماً شیڈ ز کا استعمال کیا جاتا ہے، لیکن اگر سائبان اسے مکمل طور پر نہیں ڈھکتا تو دھوپ یا بارش اس پر اثر انداز ہو گی۔ لہٰذا بالکونی ڈیزائننگ کے دوران ایسے مواد کا انتخاب کریں جو پانی اور دھوپ کا مقابلہ کر سکے۔ 

چھت کی تعمیر میں پولیمر کا استعمال اسے فنگس وغیرہ سے بچاتا ہے۔ فرش پر پکی ٹائلیں لگا کر بھی مصیبت سے بچا جا سکتا ہے۔اگر فرش کے انداز کی بات کی جائے تو آجکل بالکونی کے فرش کےلیے لکڑی کا استعمال بھی خاصا مقبول ہورہا ہے۔

آؤٹ ڈور فرنیچر

بالکونی ڈیزائننگ کے دوران وہاں عمدہ قسم کا آؤٹ ڈور فرنیچر بھی رکھا جاسکتا ہے تاکہ موسم سے لطف اندوز ہونے، مطالعہ کرنے یا پھر فیملی گیٹ ٹو گیدر کے دوران یہاں بیٹھنے کا پہلے سے انتظام موجود ہو۔ آؤٹ ڈور فرنیچر کا انتخاب گھر کے اندرونی حصے میں موجود فرنیچر کو ذہن میں رکھتے ہوئے کیا جائے۔ خوبصورت بالکونی ڈیزائننگ کے لیے درمیانے سائز کا ہلکا فرنیچر منتخب کریں۔

بالکونی میں باغبانی

بالکونی کی ڈیزائننگ کے دوران پودوں کا اضافہ کرتے ہوئے ایک خوبصورت، قدرتی اور خوشگوار احساس پیدا کیا جاسکتا ہے۔ اپارٹمنٹس میں باغبانی کے شوقین افراد کے لیے بالکونی سے بہتر اور کوئی جگہ ہوہی نہیں سکتی۔ خوبصورت اور مناسب سائز کے گملے بالکونی کی خوبصورتی میں اضافہ کرسکتے ہیں۔ 

ان گملوں میں مختلف طرح کے چھوٹے چھوٹے پودے اور پھول لگا لیں تو بالکونی کی خوبصورتی مزید بڑھ جائے گی۔ اس کے علاوہ چھت چھوٹے گملے لٹکا کر ان میں خوشنما چھوٹے پھول لگائے جاسکتے ہیں۔ مزید برآں، بالکونی میں باہر کی طرف لوہے یا اسٹیل کی جالی لگا کر وہاں رنگ برنگے گملے رکھ کر آپ چھوٹے پھول پودے لگاسکتے ہیں، جو آپ کی بالکونی کی خوبصورتی کو چار چاند لگادیں گے۔

ڈرپ ایریگیشن سسٹم

بالکونی میں پودوں کا اضافہ کرنے کے لیے ضروری ہے کہ یہاں پانی کا انتظام وانصرام بھی یقینی بنایا جائے۔ اس حوالے سے پائپ کے ذریعے پانی کی فراہمی ممکن بنائی جاسکتی ہے ، تاہم ان دنوں ماڈرن ہاؤسنگ کنسٹرکشن میں بالکونی اور باغیچے کے لیے ڈرپ ایریگیشن سسٹم زیادہ مقبول ہے۔ 

ڈرپ ایریگیشن سسٹم ایک صاف ستھرا اور آسان نظام ہے۔ روایتی طریقے میں پانی ضائع ہونے کے علاوہ مناسب وقت پر پودوں کو پانی دستیاب نہیں ہوتا جبکہ ڈرپ ایریگیشن سسٹم کے تحت تمام پودوں کو ایک ہی وقت میں پانی کی درست فراہمی ہو جاتی ہے۔

لائٹنگ

بالکونی ڈیزائننگ کے دوران لائٹنگ کی اہمیت کو نظر انداز نہ کریں کیونکہ رات کے وقت بالکونی میں اندھیرا بے حد بُرا محسوس ہوتا ہے۔ لہٰذا بالکونی کیلئے صحیح اور مناسب روشنی کا انتخاب کریں۔ اس بات کا خیال رکھیں کہ بالکونی بہت زیادہ روشن محسوس نہ ہو، چھوٹے یا درمیانے سائز کے بلب سے نکلنے والی دودھیا روشنی آپ کی بالکونی کو بہت خوبصورت ماحول فراہم کرے گی اور دور سے دیکھنے والے اس جدید وضع کی بالکونی کو دیکھ کر متاثر ہوئے بغیر نہیں رہ سکیں گے۔

گھر پیارا گھر سے مزید