آپ آف لائن ہیں
جمعہ13؍شوال المکرم 1441ھ 5؍جون 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

پنجاب 490 کوروناکیسز کیساتھ سندھ سےآگے


پاکستان میں کورونا وائرس کے مریضوں میں پنجاب سندھ سے آگے نکل گیا، مجموعی کیسز کی تعداد 490 ہو گئی۔

پاکستان میں کورونا وائرس کا پہلا کیس 25 فروری کو رپورٹ ہوا تھا، اس وقت ملک بھر میں کورونا وائرس کے 35 نئے کیسز آنے کے بعد مریضوں کی تعداد 1408 ہو گئی۔

ملک میں اس موذی وائرس سے ہلاکتیں 11 ہو چکی ہیں جبکہ صحت مند افراد کی تعداد 25 ہو گئی ہے۔

سندھ میں کورونا وائرس کے457،مریض ہیں،خیبر پختون خوا میں 181، بلوچستان میں 133، گلگت بلتستان میں 107، اسلام آباد میں 39 اور آزاد کشمیر میں 2 افراد میں وائرس کی تصدیق ہوئی ہے۔

ادھر وزیرِ اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ کا کہنا ہے کہ صوبے میں کورونا وائرس کے مقامی ٹرانسمیشن کے کیسز کی تعداد بڑھ کر مجموعی کیسز کا 10 فیصد ہوگئی ہے جو خطرناک رجحان ہے۔

انہوں نے زور دیا کہ لازمی احتیاطی تدابیر اختیار کر کے اور لاک ڈاؤن پر عمل درآمد کر کے اس وائرس کے مزید پھیلاؤ کو روکنا ہو گا ورنہ اس پر قابو پانا مشکل ہو جائے گا۔

یہ بھی پڑھیئے: کورونا 30، 40 سال کے افراد کو بری طرح متاثر کرسکتا ہے

سندھ میں لاک ڈاؤن مزید سخت کر دیا گیا ہے، آج سے شام 5 بجے تک دکانیں بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، جبکہ کرچی کی سبزی منڈی دوپہر 12 بجے سے رات 12 بجے تک بند رہے گی۔

خیبر پختون خوا کے ضلع لوئر دیر میں لاک ڈاؤن جاری ہے، ضلع میں دفعہ 144 کےنفاذ کے ساتھ ساتھ انتظامی افسر بازاروں کی مانیٹرنگ کر رہے ہیں۔

شمالی وزیرستان میں بھی دفعہ 144 نافذ کر دی گئی ہے، پولیس اور ضلعی انتظامیہ لاؤڈ اسپیکر کے ذریعے کورونا وائرس سے متعلق آگاہی مہم چلا رہی ہے۔

قومی خبریں سے مزید