آپ آف لائن ہیں
جمعہ18؍ذیقعد 1441ھ 10؍جولائی 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

ایلیٹ اسرائیلی دستوں کی شام میں وحشیانہ کارروائی

کراچی (نیوز ڈیسک) اسرائیل کے ایلیٹ دستے وحشی کارروائی کیلئے شام میں داخل ہوگئے اور نتیجہ مہلک نکلا۔ تل ابیب میں واقع اسرائیلی اخبار کی تحقیقات کے مطابق اس کارروائی کا آغاز ایک حادثے کے نتیجے میں ہوا جس میں تین فوجی ہلاک ہوگئے تھے اور یہ کارروائی نفرت انگیز جرم کے ساتھ جاری رہی اور شام کی سرزمین پر حملے کے ساتھ ختم ہوئی۔

اخبار کی تحقیقات سے اس ایلیٹ ٹیم کے اسرائیلی فوج میں چھپنے کا انکشاف ہوا۔ اسرائیلی اخبار کے مطابق گولن کی پہاڑیوں پر شام اور اسرائیل کی سرحد کے ساتھ ایک معمول کی رات تھی یا کم از کم دفاعی اسٹیبلشمنٹ کے بہت سے لوگوں کا یہی خیال تھا۔ حقیقت میں وہ کچھ عرصہ گزر جانے کے بعد بھی اب بھی ایسا ہی سوچ سکتے ہیں۔

سرحد کے اس پار تھوڑے فاصلے پر ان گھنٹوں میں جو کچھ ہوا اسے زیادہ سے زیادہ میڈیا میں کسی مختصر ذکر کے علاوہ اور کچھ نہیں ملا۔

اسرائیل دفاعی فوج کے ترجمان کے دفتر نے اس وقت زیادہ معلومات فراہم نہیں کی تھیں ، صرف فائرنگ کے تبادلہ کا بتایا تھا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ہماری فورسز کو کوئی جانی نقصان نہیں ہوا لیکن اسرائیلی اخبار کی تحقیقات کے مطابق کہانی اس سے کہیں زیادہ بڑی تھی۔

معلوم ہوا کہ فائرنگ کے تبادلے سے پہلے گیلانی بریگیڈ کی ایلیٹ جاسوسی بٹالین کی ایک ٹیم کے ذریعے ایک غیر منصوبہ بند ، غیر مجاز چھاؤنی نے شام کی سرزمین پر شب خون مارا۔ فرسٹ لیفٹیننٹ گائے ایلیاہو کی سربراہی میں جنگجوؤں نے پھرتی دکھائی۔

ایک ایسا ڈھانچہ جس میں شامی اہلکار موجود تھے ، جو اسرائیل کے لئے خطرہ نہیں تھے۔ فوجیوں نے مطالبہ کیا کہ اندر والے باہر آئیں اور اسی طرح فائرنگ شروع ہوگئی۔ اس کے مہلک نتائج بعد میں ظاہر ہوگئے۔

اہم خبریں سے مزید