آپ آف لائن ہیں
بدھ18؍ رجب المرجب 1442ھ3؍مارچ 2021ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

پان مصالحہ جات کمپنیاں سندھ حکومت کا نیا قانون پیش کریں، عدالت عظمیٰ

اسلام آباد (اے پی پی)سپریم کورٹ نے مضر صحت گٹکا، تمباکو اور پان مصالہ وغیرہ کی تیاری اور فروخت کیخلاف سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کی تشریح سے متعلق دائر درخواست پر سماعت ہوئی۔ جسٹس منیب اختر نے ریمارکس دیئے کہ سندھ اسمبلی نے اس معاملے پر نیا قانون بنا لیا ہے،تمباکو بورڈ کا بھی ایک نوٹیفکیشن آ چکا ہے۔ عدالت عظمی نے پان مصالحہ جات کمپنیوں کو نیا قانون اور تمباکو بورڈ کا نوٹیفکیشن پیش کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی سماعت غیر معینہ مدت کیلئے ملتوی کر دی ہے۔ جمعہ کو جسٹس عمر عطاء بندیال کی سربراہی تین رکنی بینچ نے مضر صحت گٹکا ، تمباکو اور پان مصالہ وغیرہ کی تیاری اور فروخت کیخلاف سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کی تشریح کیلئے دائر درخواست پر سماعت کی ۔ دوران سماعت درخواست گزار کمپنیوں کے وکیل شاہ خاور نے دلائل دیتے ہوئے موقف اپنایا کہ درخواست گزار پان مصالحہ کمپنیاں وہ اشیاء استعمال نہیں کرتیں جو مضر صحت ہوں،سندھ ہائیکورٹ نے تمام ضلعی انتظامیہ کو گٹکا ماوا اورنیم پوری کے استعمال کیخلاف

کریک ڈاؤن کا حکم دیا،ضلعی انتظامیہ نے قانونی کاروبار والی کمپنیوں کیخلاف بھی کارروائی شروع کردی، انتظامیہ نے ایک تمباکو کا ٹرک پکڑا اور اس پر گٹکا اور ماوا تیار کرنے کا مقدمہ درج کردیا گیا،پان مصالحہ کمپنیوں کیخلاف بعض مقدمات میں 337 جے کی دفعات لگائی گئی ہیں۔ واضح رہے کہ سندھ ہائیکورٹ نے اپنے فیصلے میں گٹکا اور اس سے متعلقہ مضر صحت اشیاء کی فروخت پر پابندی اور ایسی اشیاء فروخت کرنے والوں کیخلاف کریک ڈاون کا حکم دیا تھا۔ سندھ پولیس اور ضلعی انتظامیہ نے تمباکو اور پان مصالحہ کمپنیوں کیخلاف ایکشن لیا۔ تمباکو اور پان مصالحہ کمپنیوں نے سندھ ہائیکورٹ کے فیصلے کی تشریح کیلئے سپریم کورٹ میں درخواست دائر کر رکھی ہے۔

ملک بھر سے سے مزید