• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

14 سالہ لڑکی سے زیادتی کا مقدمہ دو بار تھا نے جانے پر بھی درج نہیں ہوا، پڑوسی


کراچی کے علاقے میمن گوٹھ میں 14سالہ لڑکی سے اجتماعی زیادتی کیس میں متاثرہ لڑکی کے پڑوسی نے پولیس پر مقدمہ درج نہ کرنے کا الزام لگایا ہے۔

جیو نیوز کے پروگرام ’نیا پاکستان‘ میں شہزاد اقبال سے بات کر تے ہوئے متاثرہ لڑکی کے پڑوسی نے کہا کہ ابتدا میں دو بار تھانے جانے کے باوجود پولیس نے مقدمہ درج نہیں کیا تھا۔

لڑکی سے مبینہ زیادتی کے چار ملزمان گرفتار ہوچکے ہیں۔ پولیس کے مطابق گرفتار ملزمان کی عمریں 14 سے 15 سال کے درمیان ہیں۔

واضح رہے کہ کراچی کے علاقے ملیر میمن گوٹھ میں لڑکی کے ساتھ مبینہ زیادتی کی گئی تھی واقعے پر علاقہ مکینوں کا کہنا تھا کہ ملزم نے لڑکی سے شادی کا وعدہ کیا تھا اور رشتہ داروں کے ساتھ مل کر اسے زیادتی کانشانہ بنایا۔

متاثرہ لڑکی سے ملزم نے شادی کا وعدہ کیا تھا، ملزم کے ایک رشتے دار نے لڑکی کو فون پر تنگ کرنا شروع کیا۔

علاقہ مکینوں کا کہنا تھا کہ ملزم نے چار رشتے داروں کے ساتھ ملکر لڑکی کو اغوا کیا، چاروں ملزمان نے لڑکی کے ساتھ زیادتی کی اور ویڈیو بھی بنائی۔

قومی خبریں سے مزید