کئی ممالک کی اپنے شہریوں کو کورونا ویکسین لگوانے کے عوض مراعات
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کئی ممالک کی اپنے شہریوں کو کورونا ویکسین لگوانے کے عوض مراعات


دنیا کے کئی ممالک اپنے شہریوں کو کورونا ویکسین لگوانے کے عوض مراعات دے رہے ہیں۔ تو کئی دیگر ممالک ویکسین سے اجتناب کرنے والوں کو جرمانے اور سزاؤں کے خوف سے ڈرا رہے ہیں۔

امریکا، یورپ اور جاپان سمیت دنیا کئی ممالک اپنے شہریوں کے لیے کورونا وائرس کی  ویکسینیشن کے حوالے سے کمپلژن نہیں پرسوایشن کی پالیسی پر عمل پیرا ہیں۔

 شہریوں کو مختلف مراعات کے ذریعے ویکسین لگوانے پر آمادہ کیا جارہا ہے، کئی امریکی کمپنیوں نے ویکسین لگوانے والوں کو تنخواہ کے ہمراہ 500 ڈالر بونس دینے کا اعلان کیا ہے۔

کچھ سنیما گھروں نے ویکسینیشن کارڈ دکھانے پر ناظرین کو پاپ کارن مفت دینے کا وعدہ کیا ہے، نو ملین آبادی کے اسرائیل نے اپنے ویکسین لگوانے والے شہریوں کو گرین پاس جاری کیے ہیں۔

 گرین پاس رکھنے والے افراد کو جم، سوئمنگ پول، میوزیکل پروگرامز، اسٹیڈیم، ہوٹلز، تھیٹرز اور ریسٹورنٹس میں خصوصی رسائی حاصل ہو گی۔

چین کے کئی علاقوں میں مختلف اداروں اور مقامی تنظیموں کی طرف سے کورونا وائرس کی ویکسین لگوانے والوں کو سیاحتی مقامات کے ٹکٹ، شاپنگ کوپنز اور مفت سامان خورونوش کی پیش کش کی گئی ہے، جبکہ چند متاثرہ علاقوں میں حکام کی طرف سے شہریوں چار دنوں ویکسین لگوانے کے احکامات دیے گئے ہیں۔

انڈونیشیا میں ویکسین نہ لگوانے والوں پر جرمانے کی سزا تجویز کی گئی ہے، دارالحکومت جکارتہ میں ویکسین سے بھاگنے والوں پر 356 ڈالر یا ایک ماہ کی تنخواہ کی کٹوتی کی وارننگ دی جا چکی ہے۔

 برازیل کی سپریم کورٹ نے حکم دیا ہے کہ ویکسین نہ لگوانے والوں کا داخلہ عوامی مقامات پر بند کیا جائے۔

سنگاپور میں ویکسین نہ لگوانے والوں کو خبردار کیا گیا ہے کہ بعد میں ویکسین نہیں ملے گی، جنوبی کوریا  میں ویکسین سے اجتناب کرنے والوں کو لائن کے آخر میں لگانے کی دھمکی دی جا چکی ہے۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید