• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

انڈسٹری میں خواتین کو کم عمر نظر آنے کا دباؤ ہوتا ہے، سلمیٰ ہائیک

لاس اینجلس (مانیٹرنگ ڈیسک)ہولی وڈ کی معروف اداکارہ 54 سالہ سلمیٰ ہائیک کا کہنا ہے کہ شوبز انڈسٹری میں خواتین کو زائد العمری کے باوجود کم عمر اور پرکشش دکھائی دیتے رہنے کے دباؤ کا سامنا رہتا ہے۔

جلد ہی سائنس فکشن سپر ہیرو فلم ’دی اٹرنلز‘ میں سپر ہیروئن کے روپ میں ایکشن میں دکھائی دینے والی سلمیٰ ہائیک کے مطابق زائد العمری کے باوجود انہیں انڈسٹری میں رہنے کے لیے وزن نہ بڑھانے جیسے رویوں کو دباؤ لینا پڑ رہا ہے۔فیشن میگزین ’ان اسٹائل‘ کو دیے گئے انٹرویو میں سلمیٰ ہائیک نے کھل کر زائد العمری، خواتین کی جسامت اور فلم انڈسٹری کے خواتین سے متعلق مطالبات پر بات کی اور بتایا کہ کس طرح انہیں پورے کیریئر میں جسامت کی وجہ سے مسائل کا سامنا رہا۔

سلمیٰ ہائیک کے مطابق میکسیکو نژاد ہونے کی وجہ سے انہیں شروع سے ہی جسامت کی وجہ سے دباؤ کا سامنا رہا، تاہم اب بڑھتی عمر میں بھی وہ ایسا ہی دباؤ محسوس کرتی ہیں۔اداکارہ کا کہنا تھا کہ اس وقت ان کی عمر کافی بڑھ چکی ہے مگر لوگوں کا مطالبہ ہوتا ہے کہ خواتین کم عمر نظر آئیں اور ساتھ ہی وزن کے حوالے سے بھی خواتین پر دباؤ رہتا ہے۔

سلمیٰ ہائیک کے مطابق ’دی اٹرنلز‘ میں سپر ہیروئن کا کردار ادا کرنے کی وجہ سے انہوں نے اپنا وزن بڑھایا، جس کی وجہ سے انہوں نے متعدد زیر جامہ کمپنیوں کے اشتہارات کی شوٹنگ بھی ایک سال قبل ایک ہی ہفتے میں کروائی تھی، تاکہ وزن بڑھ جانے پر انہیں طعنے نہ دیے جائیں۔

اداکارہ نے انٹرویو میں اپنے ابتدائی کیریئر سے متعلق بھی بات کی اور بتایا کہ انہوں نے 18 برس کی عمر میں میکسیکو سے ٹی وی سے اداکاری کا آغاز کیا تھا اور بعد میں امریکا منتقل ہونے پر بھی انہیں فلموں میں کردار لینے کے لیے جدوجہد کرنی پڑی۔

انٹرویو میں اداکارہ نے ایک بار پھر ہولی وڈ پروڈیوسر ہاروی وائنسٹن کے ساتھ کام کرنے اور ان کی جانب سے نامناسب مطالبے کیے جانےکے واقعات کو بھی دہرایا اور اس بات پر افسوس کا اظہار بھی کیا کہ وہ کئی سال تک خاموش رہیں۔

دل لگی سے مزید