• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بھارت چاروں شانے چت، نیوزی لینڈ ٹیسٹ کرکٹ کا عالمی چیمپئن بن گیا

نیوزی لینڈ ورلڈ ٹیسٹ چیمپئن شپ کے فائنل میں بھارت کو چاروں شانے چت کرتے ہوئے 8 وکٹوں سے شکست دے کر ٹیسٹ کرکٹ کا عالمی چیمپئن بن گیا۔ 

ساؤتھ ہمپٹن میں پہلی ٹیسٹ چیمپیئن شپ کا فائنل کھیلا گیا جس میں نیوزی لینڈ نے ٹاس جیت کر پہلے بولنگ کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔ 

کیوی بولرز نے گھر کے شیروں کو باہر کھل کر نہ کھیلنے دیا اور پہلی اننگز کائل جیمیسن کی شاندار بولنگ کے آگے بھارتی بیٹسمین صرف 217 رنز ہی بناسکے۔ 

نیوزی لینڈ کے کائل جیمیسن 5 وکٹیں لے کر نمایاں رہے بھارتی بیٹسمین اجنکیا رہانے 49 اور ویرات کوہلی 44 رنز بنا کر سرِ فہرست رہے۔  

نیوزی لینڈ کے بیٹسمین کم اسکور کا زیادہ فائدہ نہ اٹھا سکے اور پہلی انگنز میں صرف 32 رنز کی برتری لینے میں کامیاب ہوئے اور پوری ٹیم 249 پر آل آؤٹ ہوگئی۔

اس اننگز میں نیوزی لینڈ کی جانب سے ڈیون کانوے 54 اور کین ولیمسن 49 رنز بنا کر نمایاں رہے جبکہ بھارت کی طرف سے محمد شامی 4 وکٹیں لے کر کامیاب بولر بنے۔

بھارت کی دوسری اننگز میں بلے بازوں کا حال اس سے بھی زیادہ برا رہا، اور پوری ٹیم صرف 170 رنز پر آل آؤٹ ہوگئی۔ 

رشبھ پنٹ کے 41 اور روہیت شرما کے 30 رنز کے علاوہ کوئی کھلاڑی خاطر خواہ کارکردی نہیں دکھا سکا جبکہ اس مرتبہ ٹم ساؤتھی نے سب سے زیادہ 4 شکار کیے۔ 

کیوی ٹیم کو جیت کے لیے 139 رنز کا ہدف ملا جو اس نے صرف دو وکٹوں کے نقصان پر پورا کرلیا۔ 

کپتان کین ولیمسن نے اعصاب شکن مقابلے میں 52 جبکہ روس ٹیلر نے 47 رنز کی یادگار اننگز کھیلی اور ٹیم کو فتح سے ہمکنار کروایا۔

کائل جیمیسن کو مجموعی طور پر 7 وکٹیں لینے پر میچ کا بہترین کھلاڑی قرار دیا گیا۔ 

خیال رہے کہ ٹیسٹ کرکٹ میں میچز 5 دنوں پر مشتمل ہوتے ہیں، تاہم فائنل کے لیے ایک ریزرو ڈے رکھا گیا تھا، اور اس میچ کا فیصلہ بھی اسی ریزرو ڈے میں ہوا جو میچ کا مجموعی طور پر چھٹا دن تھا۔ 

کھیلوں کی خبریں سے مزید