• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چار بچوں کی ماں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا

اسلام آباد (خصوصی نامہ نگار ) چار بچوں کی ماں کو موت کے گھاٹ اتار دیا گیا۔ 40 سالہ نجمہ بی بی کو قتل کر کے لاش کو دفنا دیا گیا تھا ,نجمہ پروین ضلع لیہ میں اپنے خاوند عمانوایل سے علیحدگی کے بعد بیٹےایشون رومیل کے ہمراہ اسلام آباد آگئی تھی اور ایف ایٹ فور کے ایک بنگلے میں کام کرتی تھی۔ 11 مارچ 2021 ء کو اس کے بیٹے نے تھانہ مارگلہ میں رپورٹ درج کرائی کہ خرم اس کی والدہ کے ساتھ نکاح کے لئے اسے لے گیا ہے، پولیس نے اغوا کا مقدمہ کر کےخرم شہزاد کو چار روز قبل گرفتار کیا تو اس نے اعتراف کیا کہ نجمہ پروین سےاس کا جھگڑا ہو گیا تھا اورمشتعل ہو کر اس نےاس کاگلہ دبا دیا تھاجس سے اس کی موت واقع ہو گئی۔ انسپکٹر فیاض شنواری نے جنگ کو بتایا کہ کہ ملزم کے اعتراف کے بعد بعد پولیس نے تھانہ کورال کے علاقے شریف آباد سے خاتون کی نعش برآمد کرکے اس کا پوسٹ مارٹم کروایا ہے اور ڈی این اے کی تصدیق کے لیے لیےماں بیٹے کے نمونے لیبارٹری بھیجے ہوئے ہیں ، ڈی این اے کی تصدیق کے بعد اغوا کے مقدمے کو قتل کی دفعات پر منتقل کر دیا جائے گا،مقتولہ کے بیٹے کے مطابق اس کے والدین میں علیحدگی ہو گئی تھیاور دونوں نے دو دو بچے بانٹ لیے تھے۔
اسلام آباد سے مزید