• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

بہتر پالیسیوں سے عالمی مہنگائی کا مکمل اثر منتقل نہیں ہونے دیا، فرخ حبیب

اسلام آباد(نمائندہ جنگ) وزیر مملکت اطلاعات فرخ حبیب نے کہا ہے کہ عالمی ادارہ برائے خوراک و زراعت کے مطابق فروری 2020 تا اگست 2021 ڈیڑھ سال میں کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں میں عالمی سطح پر 127فیصد اضافہ ہوا ہے جو کورونا ،پیداوار میں کمی، لاجسٹک کاسٹ میں اضافے کا نتیجہ ہےاس کے باوجود بہتر حکومتی پالیسیوں کی بدولت مہنگائی کی عالمی سطح کی شرح کا مکمل اثر منتقل نہیں ہونے دیالیکن پی ڈی ایم نے آنکھوں پر این آر او کی پٹی باندھی ہوئی ہے، میں نہ مانوں کی رٹ لگائی ہوئی ہے، ن لیگ، پیپلز پارٹی نے اپنے ادوار میں پیداوار بڑھانے کی بجائے منی لانڈرنگ، جعلی اکاؤنٹس اور کرپشن پر توجہ مرکوز رکھی۔منگل کو پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر مملکت نے کہا کہ کھانے پینے کی اشیاء میں یہ اضافہ 10 برسوں میں سب سے زیادہ ہے، حکومت غذائی تحفظ پر کام کررہی ہے، ماضی میں ن لیگ نے کپاس کی کاشت کے علاقوں میں شوگر ملیں لگا لیں اور وہاں گنے کی کاشت شروع ہوگئی، کم آمدن اور متوسط طبقے کے لئے1000 ارب کے رہائشی اور کمرشل منصوبے منظور ہوئے جن کا معاشی اثر5000ارب ہے، مزدور طبقے کی آمدن میں بھی اضافہ ہوا ہے، 500 سے 600روپے دیہاڑی لینے والے آج 1000 تا 1200،مستری 2500روپے تک دیہاڑی لے رہے ہیں۔

اہم خبریں سے مزید