• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

آپ کے مسائل اور اُن کا حل

سوال:۔ ازروئے شریعت وضاحت فرمادیں کہ کتنے فاصلے سے نمازی کے سامنے سے گزرسکتے ہیں؟

جواب:۔ نماز پڑھنے والے کے آگے سے چھوٹی مسجد یا چھوٹے مکان میں گزرنا ناجائز ہے ،جب تک کہ اس کے آگے کوئی آڑ نہ ہو، اور اگر نمازی کے آگے سُترہ(کم از کم ایک گز شرعی کے برابراونچی اور کم از کم ایک انگلی کے برابر موٹی کوئی چیز) ہو تو اس آڑ کے آگے سے گزرنا جائزہے، سُترہ اور نمازی کے درمیان سے گزرنا جائز نہیں۔ اور بڑی مسجد (کم ازکم چالیس شرعی گز یا اس سے بڑی مسجد)یا بڑامکان یا میدان ہو تواتنے آگے سے گزرنا جائز ہے کہ اگر نمازی اپنی نظر سجدے کی جگہ پر رکھے تو گزرنے والا اسے نظر نہ آئے جس کا اندازہ نمازی کی جائے قیام سے تین صف آگے تک کیا گیا ہے، یہ اندازہ کھلے میدان یا بڑی جگہ کے بارے میں ہے۔

چھوٹی مسجدیا محدود جگہ کے لیے نہیں ہے، لہٰذا چھوٹی مسجد یا محدود جگہ میں اتنے فاصلے سے بھی گزرنا درست نہیں، بلکہ نمازی کی نماز کے ختم ہونے کا انتظار کیاجائے۔