Advertisement

یومِ عاشور، ملک بھر میں جلوس و مجالس کا سلسلہ جاری

September 10, 2019
 

نواسہ رسول حضرت امام حسین رضی اللّٰہ تعالی عنہ اور ان کے جانثار ساتھیوں کی عظیم قربانیوں کی یاد میں ملک کےمختلف چھوٹے بڑے شہروں میں جلوس بر آمد ہونے کا سلسلہ جاری ہے۔

Your browser doesnt support HTML5 video.

یومِ عاشور، ملک بھر میں جلوس و مجالس کا سلسلہ جاری

یوم عاشور کے موقع پر ملک بھر کی فضا سوگوار ہے، حضرت امام حسینؓ اور شہدائے کربلا کی یاد میں آج ملک بھر میں یوم عاشور مذہبی عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جارہا ہے، کسی بھی ناخوشگوار واقعے سے نمٹنے کے لیے سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں یوم عاشور کی مرکزی مجلس کا آغاز نشتر پارک میں ہوگیا ہے، نشتر پارک میں علامہ شہنشاہ نقوی مرکزی مجلس پڑھیں گے، جلوس امام بارگاہ حسینیہ ایرانیاں کھارادر پر اختتام پذیر ہوگا، مرکزی جلوس کے لیے تمام انتظامات مکمل کر لیے گئے ہیں اور جلوس کی گزرگاہ پر سیکیورٹی بھی سخت ہے۔

مجلس اور جلوس کے شرکاء کے داخلی راستوں پر پولیس، رینجرز اور عزاداران کی سیکیورٹی ٹیمیں شرکاء کو چیک کرکے اندر داخل ہونے کی اجازت دے رہی ہیں، واک تھرو گیٹس لگائےگئے ہیں جبکہ نشتر پارک اور جلوس کے راستوں کو بم ڈسپوزل اسکواڈ کی جانب سے سوئپنگ کے بعد کلئیر کیا جارہا ہے۔

دوسری جانب شہر میں 3 دن تک موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی عائد ہے اور شہر میں اسلحہ لے کر چلنےاور نمائش پر بھی پابندی ہے، جلوس اور مجالس کے اوقات میں مقررہ راستوں پر موبائل فون سروس بند رہے گی جبکہ پولیس اور رینجرز کی بھاری نفری مرکزی اور دیگر آنے والے جلوسوں کی سیکیورٹی پر تعینات ہے، جلوس کے راستوں کی فضائی نگرانی بھی کی جائے گی۔

لاہورمیں دسویں محرم الحرم کا مرکزی جلوس اندرون موچی گیٹ نثار حویلی سے برآمد ہو گیا ہے اور اپنے مقررہ راستوں پر رواں دواں ہے، جلوس اپنے مقررہ راستوں سے ہوتا ہوا آج شام امام بارگاہ کربلا گامے شاہ پہنچ کر اختتام پذیر ہو گا۔

نثار حویلی سے برآمد ہونے والا محرم الحرام کا مرکزی جلوس موتی بازار، رنگ محل، سنہری مسجد، حکیماں والا بازار اور بھاٹی گیٹ سے ہوتا ہوا شام کو امام بارگاہ کربلا گامے شاہ پہنچ کر ختم ہو گا۔

جلوس کی سیکیورٹی کے لیے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں، جلوس کے ملحقہ راستے خاردار تاریں اور قناتیں لگا کربند کر دیے گئے ہیں۔ شرکاء کو سخت چیکنگ کے بعد جلوس میں شامل ہونے دیا جارہا ہے۔

راولپنڈی میں دسویں محرم کے مرکزی جلوس ساڑھے 10 بجے امام بارگاہ عاشق حسین، امام بارگاہ کرنل مقبول اور ٹائروں والے امام بارگاہ سے برآمد ہوں گے، جلوسوں کے روٹ پر سیکیورٹی کے لیے سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

امام بارگاہ عاشق حسین، امام بارگاہ کرنل مقبول اور ٹائروں والے امام بارگاہ سے برآمد ہونے والے جلوس مقررہ راستے سے ہوتے ہوئے بوہڑ بازار چوک پہنچیں گے، درگاہ حسین سیٹلائٹ ٹاؤن اور امام بارگاہ بلتستانیہ سے نکلنے والے جلوس بنی چوک سے ہوتے ہوئے بوہڑ بازار جا ئیں گے، بوہڑ بازار چوک میں تمام جلوس فوارہ چوک پہنچیں گے تو مجلس عزاء اور نماز ظہرین ادا کی جائے گی، فوارہ چوک سے تعزیہ، علم، گہوارہ علی اصغر کے جلوس پرانا قلعہ سے ہوتا ہوا جامع مسجد روڈ پہنچیں گے ۔

جامع مسجد روڈ پر نماز مغربین ادا کی جائے گی اور پھر جلوس رات گئے امام بارگاہ قدیمی پہنچے گا، امام بارگاہ قدیمی میں عزاداران کو سبیل کرائی جائے گی اور جلوس اختتام پذیر ہوں گے۔

راولپنڈی کے مرکزی جلوس کی سیکیورٹی کے لیےسخت انتظامات کیے گئے ہیں، جلوس کے راستوں کو کنٹینرز اور خار دار تاریں لگا کر سیل کیا گیا ہے۔

دس محرم الحرام کے موقع پرسرگودھا کےقبرستانوں میں شہریوں کی بڑی تعداد فاتحہ خوانی کے لیے آرہے ہیں۔ اس موقع پر پھول فروش بھی قبرستانوں کے باہر موجود ہیں۔

کوئٹہ میں عاشورہ کاعلم ،تعزیوں اور ذوالجناح کاجلوس برآمد ہوگیا ہے۔ اس موقع پرسیکیورٹی کےانتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں، شہر میں موبائل فون سروس معطل ہے جبکہ موٹرسائیکل کی ڈبل سواری پر بھی پابندی عائد ہے۔

کوئٹہ میں عاشورہ کاجلوس علمدارروڈ پر رحمت اللّٰہ چوک سے برآمد ہوا، جلوس کی قیادت بلوچستان شیعہ کانفرنس کے صدر سید داؤد آغا و دیگر شیعہ اکابرین کررہے ہیں، جلوس کی سیکیورٹی کے لئے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے ہیں۔

اس حوالے سے جلوس کےروٹ اور ملحقہ راستوں کو رکاوٹیں کھڑی کر کے اور خاردار تاریں لگا کر بند کر دیا گیا ہے جبکہ جلوس کے روٹ پر دکانیں اور کاروباری مراکز سیل ہیں۔

جلوس کےروٹ اورمختلف مقامات پرپولیس اور ایف سی کے7 ہزار سے زائد اہلکار تعینات ہیں، جلوس کی سیکیورٹی کےحوالے سے فضائی نگرانی بھی جاری ہے اور جلوس کے روٹ پر 120 سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے گئے ہیں جنہیں آئی جی پولیس کے دفتر میں قائم سیل سے مانیٹر کیاجا رہا ہے۔

جلوس شام تقریباً 6 بجےعلمدار روڈ پر ہی اختتام پزیر ہوگا ، اس دوران جلوس کےشرکاء باچاخان چوک پر نماز ظہرین ادا کریں گے۔

گوجرانوالہ میں شہری یوم عاشورہ کے موقع پر قبرستان میں جا کر اپنے پیاروں کی قبروں پر دعائے مغفرت کر رہے ہیں، پاراچنارسمیت ضلع کرم کے مختلف علاقوں میں یوم عاشور کے ماتمی مجالس کا سلسلہ جاری ہے۔

ضلع بدین میں آج 118 ماتمی جلوس نکالے جائیں گے جبکہ امن و امان کے قیام کے لیے2 ہزار295 پولیس اہلکار تعینات کیے گئے ہیں۔

راجن پور میں یوم عاشورہ پر ضلع بھر میں 51 جلوس برآمد جبکہ 27 جلوسوں کو انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے ۔

‎سکھر میں یوم عاشورہ کے موقع پر سیکیورٹی کے فول پروف انتظامات کیے گئے ہیں، 44 میں سے 3بڑے جلوس انتہائی حساس، 4 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔

حیدرآباد میں یوم عاشورہ کا مرکزی جلوس انجمن حیدری کے زیر اہتمام امام بارگاہ قدم گاہ مولا علیؓ سے برآمد ہو گا ، جس کے لیے سیکورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔

ملتان شہر میں یوم عاشورہ کا مرکزی جلوس صبح امام بارگاہ حرا حیدری سے برآمد ہوچکا ہے ۔

پشاور میں آج یوم عاشورہ عقیدت و احترام کے ساتھ منایا جا رہا ہے، شہر میں یوم عاشور کے 12 جلوس برآمد ہوں گے، پہلا شبہیہ ذوالجناح کا جلوس امام بارگاہ آغا سید علی شاہ رضوی چڑویکوبان سے صبح 11 بجے برآمد ہوگا۔

پشاور میں جلوس مقررہ راستوں سے ہوتے ہوئے نماز مغرب سے پہلے اپنی اپنی امام بارگاہوں میں پہنچ کر اختتام پزیر ہوں گے، یوم عاشور پرسیکیورٹی کے سخت اقدامات کیے گئے ہیں۔

پشاور میں جلوس کے راستوں اور قریبی علاقوں میں موبائل فون سروس معطل رہے گی جبکہ اندرون شہر جانے والے راستے سیل کر دیئے گئے ہیں اور جلوس کی نگرانی کے لیے سی سی ٹی وی کیمرے بھی نصب کیے گئے ہیں۔

قصور شہر میں یوم عاشورہ کا مرکزی جلوس امام بارگاہ سادات سے صبح 10 بجے برآمد ہو گا، 2 ہزار کے قریب سیکیورٹی اہلکار ڈیوٹی پر مامور ہیں جبکہ مرکزی جلوس کے داخلی و خارجی راستوں کو خاردار تاروں سے سیل کر دیا گیا ہے، ڈرون اور سی سی ٹی کیمروں سے بھی نگرانی کی جارہی ہے۔


مکمل خبر پڑھیں