• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

ایسا کام نہیں کرنا چاہتا جسے دیکھ کر بیٹی پوچھے یہ کیا چل رہا ہے؟ ابھیشیک بچن

ممبئی (مانیٹرنگ ڈیسک)بولی وڈ اداکار ابھیشک بچن نے جے پی دتہ کی فلم’ ریفیوجی ‘سے بولی وڈ میں قدم رکھا تھا۔ اس فلم میں ابھیشیک بچن کے ساتھی کرینہ کپور بھی نظر آئی تھیں۔ فلم میں ان کی ایکٹنگ کی خوب تعریف بھی ہوئی تھی لیکن اس کے باوجود بولی وڈ میں ابھیشیک بچن کا سفر کچھ خاص نہیں رہا۔ ابھیشیک بچن کو انڈسٹری میں میں قدم رکھے 20 سال ہو چکے ہیں۔ ان دنوں ابھیشیک بچن اپنے ڈیجیٹل ڈیبیو یو ایمیزون پرائم کی برید‌ ان دا شیڈو کے حوالے سے خبروں میں ہیں۔ اس ویب سیریز میں اہم کردار میں نظر آئے۔جب اس دوران برید ان دا شیڈو کے بارے میں صحافی سے بات کرتے ہوئے ابھشیک بچن نے اپنی پروفیشنل لائف سے لے کر ذاتی زندگی کے بارے میں بات کی۔ اس وال پر کہ کیا ارادھیا یا کے والد بننے کے بعد ان کی زندگی میں کچھ بدلا؟ جواب میں ابھیشیک بچن نے کہا کہ ایک چیز کافی بدل گئی ہے۔ اس عرصے میں کچھ ایسی فلمیں اور نہیں کیں، جنہیں کرنے کے بعدمیں کافی دیر تک مطمئن نہ رہوں میں ایسا کچھ بھی نہیں کرنا چاہتا جس سے میری بیٹی ٹی وی دیکھنے پر اطمینان محسوس نہ کرے۔ یا ایسا کچھ کروں جس کے بارے میں وہ مجھ سے سوال کرے یہ کہتے ہوئے کہ ارے یہاں کیا چل رہا ہے؟،ابھیشیک بچن نے کہا میں انٹیمیٹ سین کرنے میں کافی غیرمطمئن محسوس کرتا ہوں۔ اس لیے میں کسی بھی طرح کے انٹیمیٹ سین کو کرنے سے صاف منع کر دیتا ہوں۔ فلم سائن کرنے سے پہلے میں اپنے ڈائریکٹر کو پہلے ہی کہہ دیتا ہوں کہ اگر کوئی سین بہت زیادہ انٹیمیٹ ہے تو ایسا کرنے کے لئے تیار نہیں ہوں۔ اس لیے آپ کے پاس ایک آپشن ہے اگر وہ کہتے ہیں کہ یہ فلم کا اہم حصہ ہے اور یہ کرنا ضروری ہے تو میں پہلے ہی اس کے لیے منع کر دیتا ہوں۔

دل لگی سے مزید