• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

چینی ریسٹورنٹ نے پیٹو شخص پر پابندی لگادی

ایک چینی ریسٹورنٹ نے بہت زیادہ کھانا کھانے والے شخص پر ریسٹورنٹ آنے پر پابندی لگادی ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ یہ پرخور (بسیارخور) چینی شہری، چانگشاہ شہر میں واقع ریسٹورنٹ کے بوفے (جہاں اپنی مرضی سے کھانے کی اجازت ہوتی ہے) میں ہر وزٹ پر کئی کلو گرام گوشت اور جھینگے کھا گیا جس کے باعث ریسٹورنٹ مالک کے مطابق کاروبار میں نقصان ہونے لگا۔ 

اس بسیار خور نے جس کی شناخت صرف کانگ کے نام سے ہوئی ہے اس نے صحافیوں کو بتایا کہ اس پر چانگشاہ شہر کے ہینڈیڈی سی فوڈ باربی کیو بوفے ریسٹورنٹ میں داخلے پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔

بسیار خور شخص نے کے مطابق اس پر ہینڈیڈی سی فوڈ باربی کیو بوفے ریسٹورنٹ میں داخلے پر پابندی عائد کردی گئی۔
بسیار خور شخص نے کے مطابق اس پر ہینڈیڈی سی فوڈ باربی کیو بوفے ریسٹورنٹ میں داخلے پر پابندی عائد کردی گئی۔

اور اس کی وجہ یہ بتائی گئی کہ وہ ایک عام انسان کے مقابلے میں بہت زیادہ خوراک کھاتا ہے، اس نے یہ تسلیم کیا کہ جب وہ پہلی بار ریسٹورنٹ گیا تو اس نے تقریباً ڈیڑھ کلو گرام گوشت اور جب وہ دوسری بار گیا تو ساڑھے تین سے چار کلوگرام جھینگے کھاگیا، جس کے بعد اس پر پابندی لگائی گئی۔

اسکا کہناہے کہ وہ سمجھتا ہے کہ یہ اس کے ساتھ امتیازی سلوک ہے کیونکہ وہ خوش خوراک ہے، تاہم ریسٹورنٹ کے مالک نے یہ بات ماننے سے انکار کردیا۔

دلچسپ و عجیب سے مزید