• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کالی کھانسی کی ویکسین کے کلینیکل ٹرائل کیلئے نوجوان سپر ہیروز کی تلاش

بریڈفورڈ (محمد رجاسب مغل )بریڈفورڈ کے طبی ماہرین کالی کھانسی کی ویکسین پر دنیا کے پہلے کلینیکل ریسرچ ٹرائل میں حصہ لینے کے لیے نوجوان سپر ہیروز کی تلاش میں ہیں ،این ایچ ایس فاؤنڈیشن بریڈفورڈ ٹیچنگ ہاسپٹلس ٹرسٹ کا حصہ، بریڈ فورڈ رائل انفرمری آف بریڈفورڈ کے نئے شروع کیے گئے پیشنٹ ریکروٹمنٹ سینٹر (PRC) میں تحقیقی مطالعہ جاری ہے۔پی آر سی کو ایک سال قبل نیشنل انسٹی ٹیوٹ فار ہیلتھ ریسرچ (NIHR) کے ساتھ مل کر قائم کیا گیا تھا تاکہ بریڈ فورڈ اور ضلع کے لوگوں کے لیے کلینیکل ریسرچ ٹرائلز میں حصہ لینا آسان ہو اور یہ پورے برطانیہ میں صرف پانچ مراکز میں سے ایک ہے۔ یہ تازہ ترین ٹرائل کالی کھانسی کی روک تھام کے لیے ایک نئی ویکسین کا جائزہ لے گا - جسے عام طور پر کالی کھانسی کے نام سے جانا جاتا ہے، بچپن کی بیماری جو پھیپھڑوں اور سانس لینے والی نالیوں کو متاثر کرتی ہے، یہ مطالعہ برطانیہ اور آسٹریلیا میں چلایا جا رہا ہے اور بریڈ فورڈ پورے برطانیہ میں صرف 12 مراکز میں سے ایک ہے جہاں ملک بھر میں تقریباً 600 بچوں کو بھرتی کیا جا رہا ہے۔ بریڈ فورڈ ریسرچ ٹیم کی قیادت کنسلٹنٹ پیڈیاٹریشن انیل شینائے کر رہے ہیں ڈاکٹرشینائے نے کہا یہ ٹرسٹ اور بریڈ فورڈ کے لیے ایک بہت ہی دلچسپ اور اہم آزمائش ہے، اور ہمیں اس میں حصہ لینے پر فخر ہے جو دنیا کا پہلا کلینیکل ٹرائل ہے ہم چھ سے 16 سال کی عمر کے بچوں کو بھرتی کرنے کی کوشش کر رہے ہیں، جو ہمارے نوجوان ʼسپر ہیرو ہوں گے۔ ہم انہیں سپر ہیروز اس لیے کہہ رہے ہیں کیونکہ وہ کالی کھانسی جیسی مہلک بیماری کے خلاف کھڑے ہوں گے ہم اب مقامی اسکولوں سے رابطہ کرنے کے عمل میں ہیں اور مقامی GPs کے ساتھ ساتھ بریڈفورڈ میں پیدا ہونے والے رجسٹرڈ بچوں کا استعمال کرتے ہوئے عام طور پر بچوں کو کھانسی کا آخری بوسٹر تین سال کی عمر میں ملتا ہے، اور یہ انجکشن کے ذریعے دیا جاتا ہے۔ اس ٹرائل میں بچوں کو مزید بوسٹر خوراک ملتی نظر آئے گی اور یہ انٹراناسل ہوگی یعنی ناک کے ذریعے دی جائے گی اس کے بعد شرکاء کو ان کے اینٹی باڈی ردعمل کے لئے چھ ماہ کی مدت میں چیک کیا جائے گا۔ مجموعی طور پر وہ ٹرائل کے دوران چار دفعہ چیک اپ کے لیے انہیں آنا پڑے گا ڈاکٹر شینائے نے مزید کہا کہ چونکہ یہ ویکسین ناک کے اسپرے کے ذریعے لگائی گئی تھی، اس لیے انہیں امید تھی کہ اس مطالعے کے لیے کافی تعداد میں رضا کار موجود ہوں گے، ناک کو سپرے کے ذریعے ویکسین دینا بچوں کے لیے بہت کم حملہ آور ہے، انتظام کرنے میں سیکنڈ لگتے ہیں اور یہ بچوں کو ویکسین دینے کا ایک اچھا طریقہ ہے، خاص طور پر ان بچوں میں جو سوئی سے گھبرا سکتے ہیں ہم جانتے ہیں کہ کالی کھانسی اب بھی ہمارے ساتھ ہے ،یہ وائرس ہر وقت ساتھ میں ہوتا ہے اور بہت آسانی سے پھیل سکتا ہے کیونکہ یہ بہت متعدی اور ایک بہت ہی کمزور کرنے والی بیماری ہے، جسے اکثر 100 دن کی کھانسی کہا جاتا ہے کیونکہ یہ طویل عرصے تک چل سکتی ہے یہ آزمائش بالآخر ہمارے بچوں کو کالی کھانسی سے بچائے گی اور مستقبل کے لیے مریضوں کی دیکھ بھال کو بہتر بنائے گی۔
یورپ سے سے مزید