• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

کنگنا رناوت کو جان سے مارنے کی دھمکیاں موصول

بالی ووڈ کی متنازع اداکارہ کنگنا رناوت کو جان سے مارنے کی دھکمیاں موصول ہونے لگیں جس کے بعد اُنہوں نے پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کروادی۔

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکارہ کنگنا رناوت کو سکھ کمیونٹی کے خلاف متنازع بیان دینا مہنگا پڑگیا جس کے بعد اُنہیں مارنے کی دھمکیاں ملنے لگیں۔

کنگنا رناوت نے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر اپنی تصویر شیئر کی جس کے ساتھ اُنہوں نے ہندی زبان میں ایک طویل نوٹ بھی تحریر کیا۔


اُنہوں نے اپنی انسٹاگرام پوسٹ میں کہا کہ ’غداروں کو کبھی معاف نہیں کرنا چاہیے اور نہ ہی بھولنا چاہیے، اس قسم کے واقعات میں ملک کے اندرونی غداروں کا ہاتھ ہے، غداروں نے کبھی پیسے کے لیے اور کبھی عہدے اور اقتدار کے لیے بھارت کو داغدار کرنے کا ایک بھی موقع نہیں چھوڑا۔‘

بالی ووڈ اداکارہ نے کہا کہ ’مجھے قتل کی دھمکیاں مل رہی ہیں، بھارتی پنجاب کے شہر بھٹنڈہ سے تعلق رکھنے والے ایک شخص نے مجھے جان سے مارنے کی کھلی دھمکی دی ہے لیکن میں اس قسم کی دھمکیوں سے نہیں ڈرتی۔‘

کنگنا رناوت نے کہا کہ ’میں ملک کے خلاف سازش کرنے والوں کے خلاف بولتی ہوں اور ہمیشہ بولتی رہوں گی۔‘

اپنے تبصروں کا دفاع کرتے ہوئے کنگنا نے مزید کہا کہ ’میں نے کبھی کسی ذات، مذہب یا گروہ کے بارے میں کوئی توہین آمیز یا نفرت انگیز بات نہیں کہی۔‘

کنگنا نے کہا کہ ’پنجاب میں الیکشن ہونے والے ہیں، اس کے لیے کچھ لوگ میرے الفاظ کو سیاق و سباق کے بغیر استعمال کر رہے ہیں، اگر مجھے مستقبل میں کچھ ہوا تو اس کے ذمہ دار صرف نفرت اور بیان بازی کی سیاست کرنے والے ہوں گے۔‘

اداکارہ نے مزید کہا کہ ’ان سے عاجزانہ درخواست ہے کہ وہ الیکشن جیتنے کے اپنے سیاسی عزائم کے لیے کسی کے خلاف نفرت نہ پھیلائیں۔‘

اُنہوں نے یہ بھی کہا کہ ’میں نے دھمکیوں کے خلاف مقدمہ درج کروادیا ہے اور مجھے اُمید ہے کہ پنجاب حکومت اس کے خلاف جلد از جلد ایکشن لے گی۔‘

انٹرٹینمنٹ سے مزید