• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

رواں سال گردشی قرضہ بڑھ کر 2419 ارب روپے ہوگیا،شیری رحمان

اسلام آباد (صباح نیوز)سینیٹ میں پاکستان پیپلز پارٹی کی پارلیمانی لیڈر اور سینیٹ قائمہ کمیٹی برائے خارجہ امور کی چیئرپرسن شیری رحمان نے کہا ہے کہ جون2021 میں گردشی قرضہ 2280ارب روپے تھا جو اب بڑھ کر 2419 ارب روپے ہوگیا ،بجلی کے نرخوں میں 52فیصد سے زائد اضافہ کیا گیااس کے باوجود گردشی قرضہ بڑھ رہا ہے۔ جون سے اکتوبر تک گردشی قرضوں میں 139 ارب روپے کا اضافہ ہوا، یعنی صرف گردشی قرضوں کی مد میں ماہانہ 34ارب سے زائد کا اضافہ ہو رہا ہے۔ اگست 2018 میں جب سلیکٹڈ حکومت آئی تو گردشی قرضہ 1148 ارب روپے تھا۔ان خیالات کااظہار شیری رحمان نے ہفتہ کے روز ٹوئٹرپر جاری اپنے بیان میں کیا۔ شیری رحمان نے کہا کہ تبدیلی سرکار نے گردشی قرضوں میں 110فیصد اضافہ کیا ہے۔ انہوں نے بجلی کے نرخوں میں 52فیصد سے زائد اضافہ کیا ہے اس کے باوجود گردشی قرضہ کم ہونے کے بجائے بڑھ رہا ہے۔ انہوں نے انتخابی منشور میں گردشی قرضہ ختم کرنے کا وعدہ کیا تھا، ان کو بے نقاب ہونے میں صرف 3 سال لگے ۔

اہم خبریں سے مزید