• بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن

شرجیل میمن کی لندن بدتمیزی واقعے کی شدید مذمت

فائل فوٹو
 فائل فوٹو

پی پی کے سینئر رہنما شرجیل میمن نے لندن میں مریم اورنگزیب کو ہراساں کیے جانے کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ اس واقعے سے سر شرم سے جھک گئے ہیں، یہ فعل ہماری ثقافت پر طمانچہ ہے اس کا کلچر عمران خان نے متعارف کرایا۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے صوبائی وزیراطلاعات شرجیل میمن نے لندن میں مریم اورنگزیب کو ہراساں کیے جانے کے واقعے پر ردعمل دیتے ہوئے کہا ہے کہ تحریک انصاف کارکنوں کے شرمناک فعل کی شدید مذمت کرتے ہیں۔

وزیر اطلاعات نے واقعے کی مذمت کرتے ہوئے سوال اُٹھایا کہ پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کو بھی ایسی صورتحال کا سامنا ہوگا، ان کو کیسا لگے گا اگر یہ سب ان کی اہلیہ یا بہن کے ساتھ ہو؟ 

ان کا کہنا ہے کہ ہم ایک دوسرے کے سیاسی مخالف ہیں، دشمن نہیں۔ ایک انسان، مسلمان اور پاکستانی ہونے کے ناطے یہ فعل ہماری ثقافت پر طمانچہ ہے۔

پہلے تنقید ہوتی تھی، گالم گلوچ نہیں ہوتی تھی بدقسمتی سے یہ کلچر عمران نے متعارف کرایا۔ یہ سب سے زیادہ اہم وزارت اس کو دیتا تھا جو سب سے زیادہ گالیاں دیتے تھے۔

انہوں نے عمران خان کو اسمبلی میں آنے کی دعوت دیتے ہوئے کہا کہ ان چیزوں کی وجہ سے بگاڑ آئےگا، جو  خونی بھی بن سکتاہے۔ عمران خان کو اسمبلی میں آنا چاہیئے، عمران خان گرگٹ کی طرح رنگ بدلتا ہے۔

اس موقع پر انہوں نے وزیر اعظم کی آڈیو لیگ ہونے کے حوالے سے کہا کہ یہ پریشانی کی بات ہے کہ وزیراعظم کے فون ٹیپ ہوں۔

ان کا یہ بھی کہنا تھا کہ یہ تاثرغلط اور من گھڑت ہے کہ سندھ ڈوبا نہیں ڈبویاگیا۔

انہوں نے بتایا کہ حکومت گندم کی کل پیداوار کا پچیس فیصد خریدتی ہے۔

وزیر اطلاعات سندھ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ ملک میں آئیندہ انتخابات وقت پر ہی ہونگے۔

انہوں نے کہا کہ اسحاق ڈار اور نوازشریف واپس آسکتے ہیں یہ ان کا ملک ہے۔

ایک سوال کے جواب میں ان کا کہنا تھا کہ برطانیہ کی کرنسی ڈالر کے مقابلے میں کم ہوئی ہے۔

قومی خبریں سے مزید