آپ آف لائن ہیں
اتوار 8؍ذوالقعدہ1439ھ 22؍ جولائی2018ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
فیض کی نظم کی’ سطر ‘نے بھارتی ادارے کی نیندیں اڑا دیں

معروف شاعر فیض احمد فیض کی نظم کی ایک سطر نے بھارتی ادارے کے حکام کی نیندیں اڑادیں۔

بھارت میں قائداعظم محمد علی جناح کی تصویر کے بعد اردو کے معروف شاعر فیض احمد فیض کی نظم’ہم دیکھیںگے‘ بھی تنازع کا شکار ہوگئی ۔

پونے کے ادارے فلم اینڈ ٹیلی ویژن انسٹیٹیوٹ آف انڈیا نے کہا کہ طلبہ نے دیوار پر بنائے نقش و نگار کے ذریعے ادارے کو دھمکانے کی کوشش کی ہے ۔

انسٹی ٹیوٹ کے دو طلبا نے ’ہم دیکھیں گے‘ کے الفاظ دیوار پر لکھے تو حکام کی نیندیں اڑگئیں،انتظامیہ نے ان الفاظ کو دھمکی آمیز نعرہ قرا دیدیا اور طلبہ کو ہوسٹل سے نکل جانے کا حکم سنادیا ۔

ادارے کے ڈائریکٹر نے الزام لگایا کہ طلبا نے رات کو کینٹین کی دیوار اور دروازے پر نقش و نگار بنائے ،جن میں یہ دھمکی آمیز الفاظ بھی شامل تھے ۔

دوسری جانب طلبہ یونین کا موقف ہے کہ مذاکرات کے بعد حکام نے شرط رکھ دی کہ طلبہ معافی نامہ لکھ کر دیں تو ہی واپسی کی اجازت ملے گی۔

لیکن طلبہ کا کہنا ہے کہا انتظامیہ نے غلط مطلب نکالا ہے،انہوں نے کوئی غلط کام نہیں کیا،انتظامیہ کے اقدامات آزادی اظہار رائے کو روکنے کی کوشش ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں