آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
منگل19؍ذیقعد 1440ھ 23؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
کراچی(جنگ نیوز)بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے کہا ہے کہ ہم پاکستان کے ساتھ اس وقت ہی بات چیت کے لیے تیار ہیں اگر پاکستان اپنی سرزمین پر دہشت گرد گرہوں کے خلاف سخت کارروائی کرے، کیونکہ مذاکرات اور دہشتگردی دونوں ساتھ ساتھ نہیں چل سکتے، او آئی سی میں مہمان خصوصی بن کر بھارت نے پچاس سال قبل پاکستان کے ہاتھوں بے عزتی کا بدلہ لیا ہے، اگر عمران کان اتنے ہی مدبر ہیں تو مسعود اظہر کو بھارت کے حوالے کر دیں۔ بھارتی میڈیا کے مطابق بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کا کہنا تھا کہ کچھ لوگوں کا ماننا ہے کہ پاکستان کے وزیراعظم عمران خان بڑی سیاسی سوجھ بوجھ رکھتے ہیں وہ بھارت کے ساتھ امن چاہتے ہیں،اچھے تعلقات رکھنا چاہتے ہیں، اگر وہ اتنے ہی سخی ہیں تو جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کو بھارت کے حوالے کر دیں، دیکھتے ہیں کہ عمران خان کتنے سخی ہیں۔انہوں نے کہا پاکستان جب تک دہشت گرد گروپوں کے خلاف کارروائی نہیں کرتا تب تک کسی طرح کی کوئی بات چیت نہیں کی جائے گی۔ اسلامی تنظیم کے اجلاس میں شرکت کے حوالے سے انہوں نے کہا کہ رواں برس اوآئی سی کے اجلاس میں بھارت نے مہمان خصوصی بن کر پچاس سال قبل اپنی بے عزتی کا بدلہ چکایا ہے۔ 1969میں پاکستان کے احتجاج کے بعد بھات کو اجلاس میں شرکت کی اجازت نہ دے کر بے عزتی کی گئی اس وقت بھارت اجلاس

کے مقام تک پہنچ چکا تھالیکن اآج پچاس سال بعد بھارت کو عزت سے نوازا گیاجب کہ پاکستانی نشست خالی تھی۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں