آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
پیر18؍ذیقعد 1440ھ22؍جولائی 2019ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن


پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر کا کہنا ہے کہ پاکستان ٹیم نےورلڈ کپ میں اب تک اپنی بہترین کرکٹ نہیں کھیلی، جس دن پاکستان نے بہترین کرکٹ کھیل لی اس دن یہ ٹیم کسی بھی حریف کو شکست دے سکتی ہے۔

مانچسٹر میں پاک بھارت ورلڈ کپ ٹاکرے سے قبل پریس کانفرنس میں مکی آرتھر نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کے درمیان میچ کی اہمیت اتنی ہے جتنی کسی اور میچ کی لیکن اس میچ کی کارکردگی پلیئرز کے کیرئیر کو بیان کرسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ گو کہ اس میچ میں بھی دیگر میچز کی طرح دو پوائنٹس ہی ملنے ہیں لیکن اگر کوئی پلیئر اس میچ میں پرفارم کرگیا تو اس کی کارکردگی کو مدتوں یاد رکھا جائے گا۔

مکی آرتھر نے کہا کہ چیمپئینز ٹرافی کو دو سال ہوچکے ہیں، کل کے میچ میں بھارت کیخلاف بہترین کرکٹ کھیلنا ہوگی۔ دنیا کی نظریں اس میچ پر ہوتی ہے اور یہ کرکٹ کا سب سے بڑا میچ ہے۔

ایک سوال پر مکی آرتھر نے کہا کہ یہ کہنا درست نہیں کہ شعیب ملک فیل ہوگئے ، ویسٹ انڈیز کیخلاف وہ ٹیم میں شامل نہیں تھے، انگلینڈ کیخلاف وہ تین اوور کھیلے جبکہ آسٹریلیا کیخلاف بدقسمت رہے، شعیب ملک کی کارکردگی کا تجزیہ اگلے دو میچز میں ہوگا۔

پاکستان ٹیم کے ہیڈ کوچ نے فیلڈنگ کو بہتر بنانے پر زور دیا اور کہا کہ بیٹنگ اور بولنگ میں آپ کی کارکردگی کا انحصار آپ کے حریف کی کارکردگی پر بھی ہوتا ہے لیکن فیلڈنگ ایسا شعبہ ہے جس کی پوری کارکردگی آپ کے ہاتھ میں ہے۔

انہوں نے کہا کہ کل 16 جون کو بھارت کیخلاف مکمل توجہ کے ساتھ فیلڈنگ کرنا ہوگی، انہیں ذاتی طور پر ان پریڈیکٹ ایبل کا ٹیگ اچھا نہیں لگتا لیکن یہی ٹیگ پاکستان کرکٹ ٹیم کو دلچسپ بھی بناتا ہے۔

Chatاپنی رائے سے آگاہ کریں