آپ آف لائن ہیں
بدھ12؍ صفر المظفّر 1442ھ30؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

فرانسیسی صدر چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم

میکرون چرچ کے باہر اسرائیلی اہلکاروں کو دیکھ کر برہم


فرانسیسی صدر ایمانیول میکرون چرچ کے دورے کے دوران فرانسیسی اہلکاروں کے ساتھ اسرائیلی سیکورٹی اہلکاروں کو دیکھ کربرہم ہو گئے۔

ایمانیول میکرون نے انگریزی میں ڈانٹتے ہوئے اسرائیلی سیکورٹی اہلکار سے کہا کہ ’باہر جاؤ‘ جو تم نے میرے سامنے کیا وہ بالکل پسند نہیں آیا۔ سب کو رولز معلوم ہیں ناں؟ یہ قواعد صدیوں سے ہیں، میرے ساتھ فرانسیسی اہلکار ہی رہیں گے، قانون کا احترام کریں۔

فرانسیسی صدر نے مقبوضہ بیت المقدس میں مسجد الاقصیٰ کا بھی دورہ کیا۔

واضح رہے کہ مقبوضہ بیت المقدس کا چرچ آف سینٹ این فرانس کی ملکیت ہے، 1967ء میں یہاں اسرائیلی قبضے کو بھی فرانس اشتعال انگیزی سمجھتا ہے، سلطنت عثمانیہ نے 1856ء میں اس چرچ کو فرانسیسی شہنشاہ نپولین سوئم کو بطور تحفہ دیا تھا۔

اس سے قبل 1996ء میں اس وقت کے فرانسیسی صدر جیکس شیراک نے بھی اس چرچ کے دورے پر اسرائیلی اہلکاروں کی اس حرکت پر غصہ ہو کر اپنے جہاز پر جانے کی دھمکی دے دی تھی۔ انہوں نے کہا تھا کہ اسرائیلی سیکورٹی اہلکار کے جانے تک چرچ کے اندر نہیں جاؤں گا۔

بین الاقوامی خبریں سے مزید