آپ آف لائن ہیں
جنگ ای پیپر
بدھ24؍ جمادی الثانی 1441ھ 19؍ فروری 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

عمران خان، اردوان باہمی تعاون اور تعلقات مزید مضبوط کرنے پر متفق

عمران خان، اردوان باہمی تعاون اور تعلقات مزید مضبوط کرنے پر متفق


وزیراعظم عمران خان اور ترک صدر رجب طیب اردوان نے باہمی تعاون اور تعلقات کو مزید مضبوط کرنے پر اتفاق کیا ہے۔

مفاہمتی یادداشتوں کی تقریب کے موقع پر عمران خان اور رجب طیب اردوان نے مشترکہ پریس کانفرنس کی اور بتایا کہ ہم نے دونوں ممالک کے درمیان اعلیٰ سطح کے اسٹریٹیجک تعاون پر بھی گفتگو کی ہے۔

وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ مقبوضہ کشمیر میں جاری بھارتی مظالم کے خلاف آواز اٹھانے پر ترک صدر کا دل کی گہرائیوں سے شکریہ ادا کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بھارت نے مقبوضہ وادی میں 80 لاکھ کشمیریوں کو گزشتہ 6 ماہ سے قید کرکھا ہے، بھارتی حکومت نے کشمیریوں کے بنیادی حقوق سلب کیے ہوئے ہیں۔

عمران خان نے مزید کہا کہ ترکی کو درپیش سیکیورٹی خطرات کے معاملے پر پاکستان ترکی کی حمایت کرتا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ترک صدر کے پاکستانی پارلیمان میں کیے گئے خطاب کو عوام نے بہت پسند کیا، دونوں ممالک کے درمیان تجارتی تعلقات میں نیا دور آرہا ہے۔

وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ہم نے فیصلہ کیا ہے کہ ترکی کے ساتھ مل کر اسلامو فوبیا کے خاتمے لیے کام کریں گے۔

ترک صدر رجب طیب اردوان نے کہا کہ اسٹریٹجیک تعاون کونسل دونوں ممالک کے تعلقات میں مضبوطی کا اظہار ہے، یقین ہے کہ عمران خان پاکستان میں تجارتی ماحول کو بہتر بنانے میں کوئی کسر نہیں چھوڑیں گے۔

انہوں نے کہا کہ وہ پاکستان کو اپنا دوسرا گھر سمجھتے ہیں، پرتپاک استقبال پر آپ کا شکریہ ادا کرتا ہوں، سماجی اور معاشی ترقی میں پاکستان کی ہر ممکن معاونت کریں گے۔

رجب طیب اردوان نے مزید کہا کہ اکتوبر میں شام میں فوجی آپریشن سے متعلق پاکستان اور عوام کی حمایت ملی، ترکی، پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے اور ہمیشہ کھڑا رہے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ پاک، افغان تعلقات کی مزید بہتری کے لیے ہر ممکن معاونت کریں گے، مسئلہ کشمیر مذاکرات اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں سے حل ہوسکتا ہے۔

مختلف شعبوں میں تعاون کی یادداشتوں پر دستخط

پاکستان اور ترکی کے درمیان مختلف شعبوں میں مفاہمت کی 12 یادداشتوں پر دستخط ہوگئے، یادداشتوں پر دستخط کی تقریب میں وزیراعظم عمران خان اور ترک صدر رجب طیب اردوان بھی موجود تھے۔

تقریب میں دونوں ممالک کے درمیان کلچر، سیاحت، ٹرانسپورٹ، دفاعی تربیت اور خوراک کے شعبوں میں تعاون بڑھانے کی یادداشت پر دستخط کیے گئے۔

اس موقع پر ریلوے، انفرااسٹرکچر، دونوں ممالک کے سرکاری ٹیلی ویژن سمیت دیگر اہم شعبہ جات میں باہمی تعاون کے ایم او یوز پر دستخط کیے گئے۔

پاکستان اور ترکی کےد رمیان تجارت کا حجم بڑھانے کے ایم او یو پر رجب طیب اردوان اور عمران خان نے دستخط کیے۔

پاکستان اور ترکی کے درمیان سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے شعبے میں بھی 3 یادداشتوں پر دستخط کیے گئے۔

ترکی ایرواسپیس انڈسٹریز اور نیشنل یونیورسٹی آف سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے درمیان یادداشت پر دستخط کیے گئے۔

اس کے ساتھ ترکی کی حلال اکریڈیٹیشن ایجنسی، پاکستان نیشنل اکریڈیٹیشن کونسل اور ترکی اسٹینڈرڈ انسٹیٹیوشن اور پاکستان اسٹینڈرڈ اینڈ کوالٹی کنٹرول اتھارٹی کےد رمیان یادداشت پر دستخط کیے گئے۔

قومی خبریں سے مزید