آپ آف لائن ہیں
پیر 9؍ شوال المکرم 1441ھ یکم جون 2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

’پاکستانیوں نے ناروے کی ترقی میں اہم کردار ادا کیا‘

مشیر وزارت دفاع ڈاکٹر ماریہ سلطان نے ناروے میں مقیم پاکستانیوں کی پاکستان کے لیے خدمات کو سراہتے ہوئے کہا ہے کہ یہ بات قابل انتہائی مسرت ہے کہ نارویجن پاکستانیوں نے ناروے کی ترقی میں اہم کردار ادا کیا اور انہیں اسی وجہ سے ناروے میں اہم مقام حاصل ہے اور انہیں عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔

پاکستان یونین ناروے کے چیئرمین چوہدری قمراقبال نے مشیروزارت دفاع ڈاکٹرماریہ سلطان سے ملاقات کی جس میں اوورسیز پاکستانیوں کو درپیش چیلنجز اور علاقائی صورتحال پر گفتگو ہوئی۔

چیئرمین پاکستان یونین ناروے چوہدری قمراقبال نے گزشتہ روز مشیر وزارت دفاع پاکستان اور جنوبی ایشیاء کے بارے میں معروف تحقیقاتی ادارے ’’ساسی‘‘ کی چیئر پرسن ڈاکٹر ماریہ سلطان سے ان کے اسلام آباد میں واقع دفتر میں ملاقات کی۔

اس موقع پر پاکستان یونین ناروے کے شعبہ انفارمیشن ٹیکنالوجی کے انچارچ اور آئی ٹی ایکسپرٹ انجینئر سید مجتبیٰ حیدر بھی موجود تھے۔

ملاقات کے دوران پاکستان کو درپیش عالمی سطح پر متعدد چیلنجز، مسئلہ کشمیر، ہندوستان میں مسلمانوں سمیت اقلیتوں پر بھارتی مظالم کے بارے میں اور نارویجن پاکستانیوں کے امور پر گفتگو ہوئی اور پاکستان یونین ناروے اور ’’ساسی‘‘ کے مابین مستقبل کے تعاون کے حوالے سے بھی تبادلہ خیال کیا گیا۔

ڈاکٹر ماریہ نے بتایا کہ ان کے ادارے میں ’’ساسی‘‘ کے زیرِ اہتمام مختصر اور طویل دورانیے کے مختلف کورسز اور ورکشاپس کرائی جاتی ہیں جن میں لیڈرشپ کورسز اور نوجوانوں کے لیے تربیتی ورکشاپس بھی شامل ہیں۔

انہوں نے خواہش ظاہر کی کہ پاکستان یونین ناروے کے توسط سے ’’ساسی‘‘ اس طرح کی ورکشاپس نارویجن پاکستانی نوجوانوں کے لیے بھی ترتیب دے سکتی ہے۔ اس کے علاوہ نارویجن پاکستانی نوجوان اور دانشور روٹین میں جاری ہماری ورکشاپس میں شریک ہوکر پاکستان کے حالات اور نظام اور کلچر کو بہتر طور پر سمجھ سکتے ہیں۔ اس سے بیرون ممالک پاکستان کے امیج کو بہتر بنانے میں بھی مدد ملے گی۔

ملاقات کے دوران ڈاکٹر ماریہ نے چوہدری قمراقبال کی ناروے اور پاکستان کے تعلقات کو مضبوط بنانے اور ناروے میں پاکستانی کلچر کو فروغ دینے اور ناروے میں پاکستان کا مثبت امیج پیش کرنے پر تعریف کی۔

ڈاکٹر ماریہ نے چوہدری قمراقبال کو اپنے ادارے ’’ساسی‘‘ کی شیلڈ بھی پیش کی۔ چوہدری قمراقبال نے پاکستان کے لیے ڈاکٹر ماریہ سلطان کی خدمات کو سراہا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے امیج کو یورپ میں بہتر بنانے کے لیے ڈائیلاگ کی ضرورت ہے اور اس سلسلے میں پاکستان کا دانشور طبقہ اور اوورسیز پاکستانی مل کر کام کرسکتے ہیں۔

قمراقبال نے نارویجن پاکستانیوں کو درپیش مسائل کے بارے میں کہا کہ پاکستان یونین ناروے ستر کی دہائی میں ناروے میں قائم ہونے والی نارویجن پاکستانی کمیونٹی کے مسائل کے حل کے لیے جدوجہد کا تسلسل ہے۔ یونین ناروے۔پاکستان تعلقات اور پاکستانی کلچر کے فروغ اور نارویجن پاکستانیوں کے مسائل کے حل کے لیے کوشاں رہتی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ وقت کے ساتھ ساتھ ناروے میں پاکستانیوں کے مسائل بھی بدل رہے ہیں اور ان چیلنجوں سے نمٹنے کے لیے پاکستان یونین ناروے کا تھینک ٹینک کام کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ستر کی دہائی میں ناروے میں پاکستانیوں کی آمد پر مسائل مختلف تھے جبکہ آج نئے مسائل اور نئے چیلنجز ہیں جن کا سامنا کرنے کے لیے ہم نئی حکمت عملی پر کام کررہے ہیں۔

چوہدری قمر اقبال نے کہا کہ ناروے میں ممتاز پاکستانی شخصیات کی حکومت پاکستان کی طرف سے بھی حوصلہ افزائی ہونی چاہیے۔ انہوں نے بطور مثال ناروے کے نئے وزیر ثقافت پاکستانی نژاد سیاستدان عابد قیوم راجہ کا نام پیش کرتے ہوئے کہا کہ ایسی شخصیت کو پاکستان کا صدارتی ایوارڈ ملنا چاہیے۔

ڈاکٹر ماریہ نے کہا کہ حکومت پاکستان کی طرف سے ایوارڈز کے لیے سفارتخانہ پاکستان کے ذریعے نامزدگی ہوتی۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ناروے میں پاکستان کے سفیر اس سلسلے میں موجود قواعد کے مطابق پاکستانی نژاد نارویجن وزیر عابد قیوم راجہ کا نام حکومت پاکستان کو ارسال فرمائیں گے۔

ملاقات کے اختتام پر پاکستان یونین ناروے کے چیئرمین چوہدری قمراقبال نے ڈاکٹر ماریہ سلطان کو اس سال اگست میں یوم آزادی پاکستان کے موقع پر ناروے میں یونین کی سالانہ تقریب میں شرکت کا دعوت نامہ پیش کیا۔

ڈاکٹر ماریہ نے پاکستان یونین ناروے کی طرف اگست میں ناروے آنے کی دعوت قبول کرلی۔

چیئرمین پاکستان یونین ناروے نے ڈاکٹر ماریہ سے کہا کہ وہ اگست میں ان کے دورہ ناروے اور پاکستان یونین ناروے کی سالانہ تقریب میں ان کی شرکت کے منتظر رہیں گے۔

خاص رپورٹ سے مزید