آپ آف لائن ہیں
جمعرات12؍شوال المکرم 1441ھ4؍جون2020ء
Namaz Timing
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
تازہ ترین
آج کا اخبار
کالمز

ذخیرہ اندوز نرمی سے کہی بات مان لیں ورنہ سختی ہوگی، آج روڈ میپ دوں گا، وزیراعظم، ہائی ویز کھولنے اور مزید مال گاڑیاں چلانے کا حکم


اسلام آباد (ایجنسیاں)وزیراعظم عمران خان نے فوری طورپر ہائی ویز کھولنے اور مزید مال گاڑیاں چلانے کا حکم دیتے ہوئے کہاہے کہ فوڈ چین سپلائی میں کسی صورت رکاوٹ نہیں آنی چاہیے۔

ذخیرہ اندوزوں سے کہہ رہا ہوں کہ نرمی سے کہی جانے والی بات مان لیں‘بعد میں سختی ہوگی اور سختی میں کئے جانے والے فیصلے آپ کے مفاد میں نہیں ہوں گے‘آج واضح روڈ میپ کا اعلان کروں گا۔ 

ان خیالات کا اظہارانہوں نے پی ٹی آئی کورکمیٹی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیاجبکہ اجلاس کے بعد میڈیابریفنگ میں معاون خصوصی ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان کا کہناتھاکہ کورونا وائرس کا واحد علاج احتیاط ہے،کورونا وائرس معیشت پر بھی اثر انداز ہو رہا ہے۔

متاثرہ گھرانوں میں نوجوانوں کے ذریعے راشن تقسیم کریں گے‘شہبازشریف اپنی سیاست کو قرنطینہ میں رکھیں ‘ عوام کسی سیاسی ایڈونچر کے متحمل نہیں ہو سکتے۔ 

تفصیلات کے مطابق عمران خان کی زیر صدارت تحریک انصاف کی کورکمیٹی کا اجلاس ہوا‘اجلاس میں کورونا وائرس سے نمٹنے کے لیے قلیل اورطویل مدتی پالیسی پر مشاورت کی گئی اور ملک کی شاہراہیں کھولنے اور مال بردار ریل گاڑیوں کی آمدورفت بحال کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

اس موقع پر وزیراعظم نے کہا کہ انہیں یقین ہے کہ قوم متحد ہو کر اس آزمائش کا مقابلہ کرے گی، حکومت کی ساری توجہ غریب اور نادار طبقے پر ہے‘حکومت جو بھی حکمت عملی بنا رہی ہے، اس میں دیہاڑی داراور مزدور پہلی ترجیح ہیں‘ گھبراہٹ میں کئے جانے والے فیصلے درست نہیں ہوتے۔

اجلاس میں تعمیراتی شعبے کے ریلیف پیکج کا اعلان (آج) پیر کو کرنے کا فیصلہ کیا گیا جبکہ کور کمیٹی نے تجویز دی کہ تعمیراتی صنعت کو ریلیف دے کر آپریشنل کیا جائے، اس سے روزگار سمیت 40 صنعتیں آپریشنل ہوں گی۔

کور کمیٹی اجلاس میں وزیر ریلوے کو فوری طور پر اضافی مال گاڑیاں چلانے کی ہدایت کی گئی تاہم مسافر ٹرینیں فی الحال بند رہیں گی۔

کور کمیٹی نے ملک بھر میں پی ٹی آئی ارکان اسمبلی کو خصوصی ٹاسک سونپے کا فیصلہ کیا جبکہ وزیراعظم نے ٹائیگر فورس سے متعلق کور کمیٹی ممبران کو ذمہ داریاں سونپ دی ہیں۔

اجلاس میں حکومتی ریلیف پیکج کو مستحق افراد تک پہنچانے کیلئے رضاکار فورس کی حکمت عملی طے پا گئی اور فیصلہ کیا گیا کہ ملک بھر میں پی ٹی آئی ارکان اسمبلی کو خصوصی ٹاسک سونپا جائے گا اور ہزاروں پارٹی عہدیداروں کو کورونا ریلیف ٹائیگرز پروگرام میں شامل کیا جائے گا۔

عمران خان نے کہا کہ کورونا کے خلاف جنگ جیتنے کے لیے ہر شہری کو کردار ادا کرنا ہوگا، مجھے یقین ہے قوم متحد ہوکر اس آزمائش کا مقابلہ کرے گی، محدود وسائل کے باوجود ہر سرکاری ادارہ بہترین کام کررہا ہے‘ ہنگامی حالات میں تمام وسائل قوم پر لگائیں گے۔

وزیراعظم نے صوبائی حکومتوں کو ہدایت دیتے ہوئے کہا کہ ذخیرہ اندوز کسی نرمی کے مستحق نہیں، صوبائی حکومتیں ان کے خلاف سخت ایکشن لیں۔ 

وزیراعظم نے شاہراہوں پر گڈز ٹرانسپورٹ بحال رکھنے سے متعلق وفاقی وزیر مراد سعید کو ٹاسک سونپتے ہوئے کہا فوڈ چین میں کسی صورت رکاوٹ نہیں آنی چاہیے۔ 

عمران خان نے ایک بار پھر قوم کو اعتماد میں لینے کا فیصلہ کرتے ہوئے کہا کہ پیر کو قوم کے سامنے جامع روڈ میپ رکھوں گا، مشکل وقت میں لیڈر شپ کا امتحان ہوتا ہے۔ 

اجلاس کے بعد میڈیا کوبریفنگ دیتے ہوئے ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے موجودہ بحران کے دوران ذخیرہ اندوزی کرنے والوں سے آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کی ہدایت کی ہے۔

عوام کو اشیائے خوردونوش کی بلاتعطل فراہمی یقینی بنانے کےلئے رضاکار کورونا یوتھ ٹائیگر فورس اور صحافیوں کے تحفظ کے لئے موبائل ایپلی کیشن کا (آج) پیر کو اجراءکریں گے ،کورونا وائرس کا واحد علاج احتیاط ہے،کورونا وائرس معیشت پر بھی اثر انداز ہو رہا ہے۔

اہم خبریں سے مزید