آپ آف لائن ہیں
بدھ12؍ صفر المظفّر 1442ھ30؍ستمبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

دیسی ناشتہ کرنا ہمیشہ پُر لطف ہوتا ہے

انسانی صحت کے لیے بھرپور ناشتہ کرنا بہت ضروری ہے کیونکہ صبح کے وقت جسم کا میٹابولزم بہتر انداز میں چلتا ہے۔ لہٰذا آپ جو بھی کھاتے ہیں وہ اچھی طرح ہضم ہوتا اور جسم کو توانائی فراہم کرتا ہے۔ کہا جاتا ہے کہ صبح کا ناشتہ بادشاہوں کی طرح کیا جائے تاکہ تمام دن کے لیے توانائی ملے اور مختلف کام سرانجام دینے کی قوت بھی ہو۔ پوری دنیا کے لوگ اپنی اپنی پسند اور روایت کے مطابق ناشتہ کرتے ہیں۔ ہمارے یہاں بھی اگر ناشتہ معمول سے ہٹ کر ہوتو کھانے کا بھی خوب دل چاہتا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ لوگ چھٹی والے دن عموماً دیسی ناشتہ کرنے کو ترجیح دیتے ہیں۔ 

پاکستان بھر میں بنایا جانے والا دیسی ناشتہ نہ صرف اندرونِ ملک بلکہ بیرونِ ملک بھی بے حد پسند کیا جاتا ہے۔ ان میںپائے، نہاری، نان چنے، پراٹھے، حلوہ پوری، پٹھورے، لسی اور چائے سرفہرست ہیں۔ دیسی ناشتوں میں عموماً دیسی گھی اور مکھن استعمال کیے جاتے ہیں۔ ان کی ایک خاص مہک اور لذیذ ذائقہ ہوتا ہے۔ یہ ایسے پکوان ہیں جو اپنے ذائقے کی بنا پر صرف پاکستان ہی نہیں پوری دنیا میں مقبول ہوگئے ہیں۔ خاص طور پرمغربی ممالک میں یہ پکوان خوب شوق سے کھائے جارہے ہیں۔ دیسی ناشتہ میں بنائی جانے والی چند ڈشز کی تراکیب ملاحظہ کریں۔

لچھے دار پراٹھے

درکار اجزاء:

آٹا۔ ـــــــــــــــــــــــــــــ ایک کپ

میدہ۔ ـــــــــــــــــــــــــــــ دو کپ

نمک۔ ـــــــــــــــــــــــــــــ ایک چٹکی

پانی۔ ـــــــــــــــــــــــــــــ حسبِ ضرورت

تیل۔ ـــــــــــــــــــــــــــــ حسبِ ضرورت

ترکیب:

سب سے پہلے میدہ ، آٹا، نمک،پانی اور تیل مکس کرکے سخت ڈو تیار کرلیں اور تقریباً دس منٹ کےلیے رکھ دیں۔ اس کے بعد اس ڈو کے چھوٹے چھوٹے سات پیڑے بنا کر الگ الگ بیل لیں، پھر ہر روٹی پر تھوڑا سا تیل لگا کر اس کے اوپر دوسری روٹی رکھ دیں ۔ اسی طرح ساتوں روٹیاں تیل لگا کر ایک دوسرے کے اوپر رکھ دی جائیں، پھر انہیں ایک ساتھ یوں بیلیں کے ایک روٹی بن جائے، اب تیز چھری سے اس کی لمبی اور پتلی پٹیاں کاٹ لیں پھر ایک ایک پٹی کو اس طرح رول کریں کہ یہ گول ہوجائیں۔ اب انہیں بیل کر گرم توے پر فرائی کرلیں۔ لیجیے گرما گرم لچھے دار پراٹھے تیار ہیں۔ انہیں انڈے کے علاوہ دہی یا لسی کے ساتھ بھی کھایا جاسکتا ہے۔

آلو کے پراٹھے

درکار اجزاء:

آٹا۔ ایک کلو

انڈہ۔ ایک عدد

آلو۔ آدھا کلو

گھی۔ حسب ضرورت

نمک۔ حسب پسند

سرخ مرچ۔ حسب پسند

سفید زیرہ۔ ایک چائے کا چمچ

ہری مرچ۔ چھ عدد

بڑیپیاز۔ ایک عدد

ادرک۔ چوتھائی چھٹانک

ہرا دھنیا۔ تھوڑا سا

گرم مصالحہ پسا ہوا۔ ایک چائے کا چمچ

سوکھا دھنیا۔ ایک چائے کا چمچ

ترکیب:

آٹے میں تھوڑا سانمک ملا کر اچھی طرح گوندھیں۔پھر آلو اُبال کر انہیں چھیل کر میش کر لیں۔ ان میں نمک، سرخ مرچ، ہری مرچ، گرم مصالحہ، دھنیا، زیرہ، ہرا دھنیا، اور ادرک بھی پیس کر ملا لیں۔ انڈے کو خوب اچھی طرح پھینٹ کر آلو میں اچھی طرح ملادیں۔ آٹے کے چھوٹے چھوٹے پیڑے بنائیں اور ان کو بیل کر رکھ لیں۔ ایک پیڑا بیل کر رکھیں اور اس پر آلوؤں کی تہہ بچھا کر اوپر دوسرا پیڑا رکھ دیں اور دونوں کناروں کو اچھی طرح دبا کر بند کر دیں تاکہ آلو باہر نہ آسکیں۔ اس کو روٹی کی طرح بیل کر گرم توے پر ڈال دیں۔ ہلکی آنچ پر دونوں طرف سے سرخ کر کے اتار لیں۔ مکھن لگا کر کھائیں تو آلو کے پراٹھے بہت مزہ دیں گے۔

مرغ چنے

درکار اجزاء:

چکن لیگ پیس۔ چار سو گرام

تیل۔ آدھا کپ

پیاز ۔ ایک عدد(چوپ کیا ہوا)

ثابت زیرہ۔ ایک چائے کا چمچ

سبز مرچ ۔چوپ کی ہوئی دو عدد

ادرک لہسن پیسٹ ۔ڈیڑھ کھانے کا چمچ

ٹماٹر ۔دو عدد

دہی ۔دو کھانے کے چمچ

نمک ۔حسبِ ذائقہ

گرم پانی۔ ایک کپ

اُبلے ہوئے سفید چنے ۔ڈیڑھ کپ

مرغ چنا مصالحہ۔ دو کھانے کے چمچ

مرغ مصالحہ کیلئے درکار اجزاء:

نمک۔ ایک کھانے کاچمچ

ثابت دھنیا ۔دو کھانے کے چمچ

ثابت زیرہ ۔دو کھانے کے چمچ

لونگ ۔آٹھ عدد

لال مرچ پسی ہوئی۔ دو کھانے کے چمچ

دار چینی ۔تین عدد

بڑی اِلائچی۔ تین عدد

بادیان ۔دو عدد

سبز اِلائچی۔ چار عدد

چکن پاؤڈر ۔تین کھانے کے چمچ

میٹھا سوڈا۔ آدھا چائے کاچمچ

اجوائن ۔ایک چوتھائی چائے کا چمچ

جاوتری۔ پانچ گرام

ہلدی۔ ایک چائے کا چمچ

(نوٹ: ان سب کو بھون کر گرائنڈ کر کے استعمال کریں)

ترکیب:

ایک پین میں کھانے کا تیل لیں اور ا س میں پیاز، ثابت زیرہ اورسبز مرچ ڈال کر لائٹ براؤن کر لیں۔ اب اس میں ادرک لہسن پیسٹ، چکن لیگ پیس، ٹماٹر، دہی، نمک اور مرغ چنے مصالحہ ڈال کر دوسے تین منٹ تک بھون لیں۔ پھر آدھا کپ گرم پانی ڈال کر آٹھ سے دس منٹ تک دم دیں اور دو سے تین منٹ تک بھون لیں اوراس میں اُبلے ہوئے سفید چنے اور گرم پانی (آدھا کپ ) ڈال کر ایک سے دو منٹ تک پکا لیں۔ اب اسے دو سے تین منٹ تک دم دینے کے بعدگارنش کر لیں۔ لیجیے مزیدار مرغ چنے تیار ہیں، ان کو گرما گرم نان کے ساتھ سرو کریں۔

حلوہ پوری

درکار اجزاء:

تیل۔ ایک کپ

چنے(اُبلے ہوئے)۔ 200گرام

سوجی۔250گرام

چینی ۔500گرام

پیاز۔ ایک عدد

زیرہ(ثابت)۔ آدھا چائے کا چمچ

ہلدی۔ ایک چائے کا چمچ

لال مرچ پسی ہوئی۔ ایک کھانے کا چمچ

دھنیا پاؤڈر۔ ایک چائے کا چمچ

زیرہ پاؤڈر۔ ایک چائے کا چمچ

ادرک لہسن کا پیسٹ۔ ایک چائے کا چمچ

تیل۔ ایک کپ

پیلا رنگ ۔ایک چُٹکی

کھوپرا ۔20گرام

کشمش ۔20گرام

کاجو ۔20گرام

پستہ ۔20گرام

بادام ۔20گرام

میدہ۔ ایک کلو

نمک ۔حسبِ ذائقہ

ترکیب:

چنے بنانے کے لیے ایک پین میں ایک چوتھائی کپ تیل ڈالیں، پھر اس میں پیاز، ثابت زیرہ آدھا چائے کا چمچ، ہلدی، ادرک لہسن کا پیسٹ، لال مرچ پسی ہوئی، دھنیا پاؤڈر، زیرہ پاؤڈر، اُبلے ہوئے چنے پانی ڈال کر ہلکی آنچ پر تین سے چار منٹ تک دم پر رکھ دیں۔ لیجیے چنے تیار ہیں۔

حلوہ بنانے کے لیے ایک پین میں آدھا کپ تیل کے اندر سوجی ڈال کر بھون لیں، پھر پانی میں پیلا فوڈ کلر ڈال کر،چینی، کھوپرہ، کشمش، کاجو، پستہ اور بادام ڈال کر پانچ سے سات منٹ پکائیں۔ حلوہ پکنے پر ایک پیالے میں نکال لیں۔

پوری بنانے کے لیے ایک کلو میدہ،نمک حسبِ ذائقہ ،تیل آدھا کپ اور پانی ڈال کر گوندھ لیں۔ پھر اسے پندرہ سے بیس منٹ کے لیے رکھ دیں۔بعد میں پیڑے بناکر بیلن سے پھیلا کر پوری بنا لیں۔ اب ایک برتن میں تیل ڈال پوری کو لائٹ براؤن ہونے تک ڈیپ فرائی کریں۔ پوریاں تیار ہونے پر ایک پلیٹ میں رکھیں پھر حلوہ اور چنے کے ہمراہ پیش کریں۔

بیف نہاری

درکار اجزاء:

گائے کا گوشت۔ ایک کلو

تیل۔ آدھا کپ

پیاز۔ دو عدد

سفید زیرہ۔ ایک چائے کا چمچ

ادرک لہسن کا پیسٹ۔ دو چائے کا چمچ

ہری مرچ۔ پانچ عدد

نمک ۔حسبِ ذائقہ

سفید زیرہ پسا ہوا۔ ڈیڑھ چائے کا چمچ

دھنیا پسا ہوا ۔ڈیڑھ چائے کا چمچ

دار چینی،بڑی اور چھوٹی الا ئچی،لونگ،تیز پتہ،جائفل پسا ہوا۔ دو چائے کا چمچ

لال مرچ پسی ہوئی ۔آدھا چائے کا چمچ

ہلدی۔ ایک چائے کا چمچ

سونف پسی ہوئی۔ ڈیڑھ چائے کا چمچ

آٹا ۔آدھا کپ

ترکیب:

پکانے والے بر تن میں آئل، پیاز، سفیدزیرہ ثابت ڈال کر لائٹ براؤن ہونے تک پکائیں۔ پھر ادرک لہسن کا پیسٹ ڈال کر لا ئٹ براؤن ہونے تک پکائیں۔پھر بیف، ہری مرچ ثابت،نمک، زیرہ پاؤڈر،دھنیا پسا ہوا،(دار چینی،بڑی الائچی،چھوٹی الائچی،لونگ،تیز پتہ،جائفل) پساہوا،لال مرچ اورہلدی ڈال کر پانچ سے سات منٹ پکائیں۔گرم پانی ڈال کر بیف کو گلنے تک پکائیں۔گل جانے پر آٹےکو بھون کر تھوڑے سے پانی میں ملا کر ڈال دیں اور سونف بھی ڈال دیں۔ اب بیف نہاری سرو کرنے کے لیےتیا ر ہے۔

پائے

درکار اجزاء:

بکرے کے پائے۔ چار عدد

بونگ کا گوشت۔ 1کلو(دھو کر خشک کر لیں)

دھنیا پاؤڈر ۔دو چائے کے چمچ

نمک۔ حسب ذائقہ

لہسن کے جوئے۔6سے8 عدد

پیاز۔دوعدد(چوپ کر لیں)

ادرک۔ ایک انچ کا ٹکڑا(چوپ کر لیں)

لال مرچ پاؤڈر۔ دو چائے کے چمچ

زیرہ۔ ایک چائے کا چمچ

ثابت سیاہ مرچیں ۔ایک چائے کا چمچ

تیز پات ۔ایک عدد

بڑی الائچی۔ دو عدد

جائفل جاوتری پاؤڈر۔ ایک چائے کا چمچ

لہسن ادرک پیسٹ۔ دو چائے کے چمچ

پیاز۔ ایک عدد(سلائس کاٹ لیں)

ہلدی پاؤڈر۔ ایک چائے کا چمچ

گرم مصالحہ پاؤڈر ۔1چائے کا چمچ

ہرا دھنیا۔ ایک کھانے کا چمچ

ہری مرچیں۔ ایک کھانے کا چمچ(چوپ کی ہوئی)

سرسوں کا تیل۔ حسبِ ضرورت

ترکیب:

ایک پتیلی میں بکرے کے پائے، بونگ کا گوشت، نمک، لہسن کے جوئے، پیاز، ادرک، زیرہ ، ثابت سیاہ مرچیں، تیز پات، بڑی الائچی ، جائفل ، جاوتری پاؤڈر اور اتنا پانی ڈال کر ہلکی آنچ پر پکائیں کہ اسی پانی میں بونگ اور پائے گل جائیں اور حسبِ پسند مقدار میں شوربہ بھی باقی رہے۔ اس کے بعد بگھار تیار کرنے کے لئے ایک پتیلی میں تیل گرم کر کے اس میں پیاز ڈال کر سنہری ہونے تک فرائی کر یں اس کے بعد اس میں دھنیا پاؤڈر لال مرچ پاؤڈر، لہسن، ادرک پیسٹ، ہلدی پاؤڈر، گرم مصالحہ پاؤڈر اور نمک ڈال کر مصالحہ بھونیں اور اسے شوربے میں ڈال کر مکس کر یں۔ لیجیے مزیدار بکرے کے پائے تیار ہیں۔ سرونگ ڈش میں نکال کر ہرا دھنیا اور ہری مرچوں سے گارنش کر کے نان یا تلوں والے کلچوں کے ہمراہ پیش کریں۔

پٹھورے

درکار اجزاء:

میدہ۔ ڈھائی کپ

سوجی۔ 1/4کپ

نمک۔ 1/2چائے کا چمچ

چینی۔ 1/2چائے کا چمچ

بیکنگ سوڈا۔ 1/2چائے کا چمچ

دہی۔ 1/4کپ

تیل۔ 2کھانے کے چمچ

نیم گرم پانی۔ ڈو کے لئے

ترکیب:

میدہ، سوجی، نمک، چینی، بیکنگ سوڈا، دہی اور تیل کو اچھی طرح مکس کرلیں۔پھر اسے نیم گرم پانی سے گوندھ کر ڈو بنائیں اور ایک گھنٹہ کے لیے چھوڑ دیں۔ اب پیڑے بنا کر پٹھورے کی شکل میں بیل لیں اور جب تیل بہت زیادہ گرم ہو جائے تو اس تیل میں ڈیپ فرائی کریں۔ جب یہ گولڈن براؤن رنگ کے ہو جائیں تو نکال لیں۔ پھر انھیں چھولوں کے ساتھ پیش کریں۔

لاہوری قتلمہ

آٹے کیلئے درکار اجزاء:

میدہ۔ 300گرام

نمک۔حسب ِذائقہ

تیل۔4کھانے کے چمچ

نوٹ: میدے میں نمک اور تیل ڈال کر نیم گرم پانی سے نرم سا آٹا گوندھ کر 10منٹ کے لئے رکھ دیں۔

کوٹنگ کیلئے درکار اجزاء:

لال مرچ پاؤڈر۔ 2کھانے کے چمچ

ٹماٹر۔ہلکے سے ابلے ہوئے 3عدد

انڈہ۔1عدد

تیل۔فرائی کے لئے

لال رنگ۔ 1/4چائے کا چمچ

سوکھا دھنیا۔ 2کھانے کے چمچ

اناردانہ۔ 2کھانے کے چمچ

نمک۔ حسبِ ذائقہ

زیرہ۔ 2کھانے کے چمچ

اجوائن۔ 1کھانے کا چمچ

ترکیب:

ایک پیالے میں انڈے کو ہلکا سا پھینٹ کر اس میں لال مرچ پاؤڈر، نمک، پساہوا زیرہ، دھنیا،اجوائن اور اناردانہ ڈال کر مکس کریں۔اُبلے ہوئے ٹماٹروں کا چھلکا اُتار کر بلینڈرمیں ڈال کر بلینڈ کریںاور ساتھ ہی لال رنگ بھی ڈال دیں، اب اس آمیزے کو انڈے والےآمیزے میں ڈال کر مکس کرلیں۔جب استعمال کرنا ہوتو سبزدھنیاباریک کاٹ کے مکس کرلیں۔ اب آٹے کے درمیانے سائز کے یا جتناآپ کو پسند ہو، پیڑے بنا کر روٹی کی طرح رول کرتے جائیں اور چھُری سے کہیں کہیں نشان لگادیں تاکہ فرائی کرتے ہوئے تیل آسانی سے نکل جائے۔ اب تیار کیا ہوا آمیزہ اس روٹی پہ اس طرح لگائیں جیسے پیزا کے بیس پر پیزا کی سوس لگاتے ہیں۔اب ایک پین میں تیل ڈال کر روٹی کو سادے حصے کی جانب سے گرم تیل میں ڈال کر 3 سے 4 منٹ کیلئے پکائیں اورپھر سائیڈ بدل کر مصالحے والی سائیڈ کو 5سے 7منٹ تک پکا کر تیل سے نکال لیں۔قتلمہ قیمے اور آلو سے بھی بنایا جاتا ہے۔ اسے زیادہ تر سبزیوں کے قورمے یا روغن قورمے کے ساتھ کھانے کیلئے پیش کیا جاتا ہے مگر رائتے یا چٹنی کے ساتھ بھی پیش کیا جا سکتا ہے۔

الائچی لسی

درکار اجزاء:

تازہ دہی ۔2 کپ

دودھ۔1 کپ

چینی ۔حسبِ ضرورت

الائچی پاؤڈر۔2 چائے کے چمچ

برف کے کیوبز۔4 سے 5

ترکیب:

سوائے برف کے تمام اجزائے ترکیبی باہم یکجا کر لیں اور ایک مکسر میں2 تا 3منٹ تک بلینڈ کریں۔ پھرگلاسوں میں انڈیل کر پیش کریں۔

چاٹی کی لسی

درکار اجزاء:

دہی(بالائی والا)۔ ایک کلو

چورا کی ہوئی برف۔ ایک پیالی

پسا ہوا زیرہ۔ ڈیڑھ چائے کا چمچ

چینی۔ حسبِ ذائقہ

نمک۔ ڈیڑھ چائے کا چمچ

ترکیب:

ایک مٹی کی ہانڈی یا مٹکالیں اور اس میں پسا ہوا زیرہ، نمک ، دہی اور تھوڑی چینی شامل کر یں اور بلونے سے خوب بلوئیں۔ دہی خوب مکس ہو جائے تو برف شامل کریں۔ تھوڑا سا پانی بھی شامل کر یں۔ تیار ہونے پر ٹھنڈی ٹھنڈی پیش کریں۔

کھانا خزانہ سے مزید