آپ آف لائن ہیں
جمعرات13؍ صفر المظفّر 1442ھ یکم اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

حجاب کے بغیر بھی میں مسلمان ہی رہوں گی: جینیفر گراؤٹ

سات سال قبل دائرہ اسلام میں داخل ہونے والی امریکی گلوکارہ جینیفر گراؤٹ کا کہنا ہے کہ وہ دوسروں کی توقعات کے مطابق زندگی گزارتے گزارتے تھک گئی ہیں۔

حال ہی میں جینیفر نے اپنی بغیر حجاب کی تصویریں شیئر کرتے ہوئے اسلام قبول کرنے کے بعد لوگوں کی ان سے توقعات اور انہیں پورا کرنے کی کوشش کے بارے میں کھل کر اظہار کیا۔

اپنی تفصیلی پوسٹ کے آغاز میں جینیفر نے لکھا کہ میں جانتی ہوں کہ مجھے اس پوسٹ پر تنقید کا سامنا کرنا پڑے گا اور ایک نیا تنازعہ کھڑا ہوگا، لیکن میں اس کے لیے ذہنی طور پر تیار ہوں۔

انہوں نے کہا کہ مجھے اپنی ذہنی حالت ٹھیک رکھنے کے لیے سوشل میڈیا سے وقفہ لینا پڑا۔ سوشل میڈیا کے زیادہ دباؤ کی وجہ بتاتے ہوئے انہوں نے لکھا کہ یہاں میں مسلم معاشرے کی ’غیر حقیقت پسندانہ توقعات‘ کے مطابق زندگی گزارنے کی کوشش کر رہی ہوں اور اس کی وجہ سے ایک سے زیادہ مرتبہ میں اپنی ذات کو کھو بیٹھی ہوں۔

انہوں نے کہا کہ سات سال سے زائد کا عرصہ گزر جانے کے بعد میں بغیر حجاب کے تصویر پوسٹ کررہی ہوں، اور مجھے یقین ہے کہ میں تب بھی مسلمان ہی رہوں گی کیونکہ حجاب بلاشبہ ایک فرض ہے۔

ان کا کہنا تھا ’مجھے یقین ہے کہ سر ڈھانپنا ایک ’فرض‘ ہے، اس لیے میں یقیناً کسی بھی عورت کے حجاب پہننے کی حوصلہ شکنی کرنے کی کوشش نہیں کر رہی لیکن اسی کے ساتھ ہی میں یہ بتانا چاہتی ہوں کہ ہر روز خود کو کسی ایسے انسان کے طور پر پیش کرنا جو میں نہیں ہوں، میری ذات کو ختم کر رہا ہے۔‘

View this post on Instagram

So, I know I’m probably going to get a lot of unfollows, bad comments, and hate messages for this post. But I have made peace with that, Alhamdoulillah. As I mentioned in my last one, I had to take a break from social media for the sake of my own sanity. One of the reasons social media weighs down on me so hard is because I feel that I am constantly trying to live up to the unrealistic expectations of the community, and this has, on more than one occasion, led to me losing myself entirely. I have been Muslim now for over 7 years, Alhamdoulillah. And yes, even though I am sharing a picture of myself without my headscarf, I am still Muslim. I do believe that covering is “fard,” an obligation, so I am certainly not trying to discourage any woman from wearing it. But at the same time, it crushes my being every day to try to present myself as something I’m not, just because people are expecting me to be a role model, because I have a nice voice when I recite the Quran. I understand that my platform is a both a blessing and a responsibility. I understand that Allah has blessed me with so much, including the ability to recite, and this is an honor that shouldn’t be taken lightly. But I also feel the need to let my audience know and understand that the ability to recite does not define me... I have many other interests, for example I love to sing and write poetry, I love language, sports, dancing... I could treat this platform purely as my business, and stay in the box which I’ve let myself get trapped in. But that’s not my reality; I am also an artist, a whole multi-faceted person, and this is the medium through which I am able to express myself and communicate, always with a purpose iA. I love you all and do not want to offend anyone; I remain Muslim to my core. You may see me some days as you would like to see me. Other days you may see me as something you did not expect. I am very much imperfect, may Allah forgive us all. I’ll end with two things: 1. Please don’t define people by how they appear, whether good or bad; you do not really know them. 2. Remember that the words of the Quran transcend whoever is reciting it. I am merely a vessel, nothing more.

A post shared by Jennifer Grout (@jeangrout) on


انہوں نے لکھا کہ ایسا صرف اس لیے ہو رہا ہے کیونکہ میری آواز اچھی ہے اور میں قرآن کی تلاوت کرتی ہوں تو لوگ مجھ سے ایک رول ماڈل بننے کی توقع کر رہے ہیں۔‘

جینفر نے لکھا کہ ’میرا پلیٹ فارم ایک نعمت کے ساتھ ذمہ داری بھی ہے۔ اللہ نے مجھے بہت کچھ عنایت کیا ہے جس میں تلاوت کرنے کی قابلیت بھی شامل ہے، اور یہ ایک اعزاز ہے جسے معمولی انداز میں نہیں لیا جانا چاہیے۔‘

انہوں نے لکھا کہ یہاں میں اپنے مداحوں کو یہ بتاتی چلوں کہ صرف تلاوت کرنے کی قابلیت میری تعریف نہیں ہے بلکہ میری اور بھی بہت سی دلچسپیاں ہیں، مثال کے طور پر مجھے گانا اور شعر لکھنا پسند ہے، مجھے زبان، کھیل اور رقص پسند ہے۔‘

اپنی تفصیلی پوسٹ کے اختتام میں جینیفر نے لکھا کہ ’ہوسکتا ہے کچھ دن میں آپ کو ویسی نظر آؤں جیسا آپ مجھے دیکھنا چاہتے ہیں اور باقی دن شاید آپ مجھے ویسا دیکھیں جس کا آپ نے کبھی تصور نہ کیا ہو، مجھ میں بہت عیب ہیں، اللہ ہم سب کو معاف کرے۔‘

جینفر نے زور دیا کہ لوگوں کو بغیر جانے ان کی ظاہری حالت کی بنا پر جانچنا چھوڑ دیں کیونکہ’جو کوئی بھی قرآن کی تلاوت کرتا ہے اس بنا پر وہ دوسروں سے سبقت لے جاتا ہے اور میں تو صرف ایک ذریعہ ہوں، اس کے سوا کچھ بھی نہیں۔‘

گزشتہ دنوں کئے گئے اپنے ایک ٹوئٹ میں انہوں نے لکھا تھا کہ ’میں دوسروں کے توقعات کے مطابق زندگی گزارتے گزارتے تھک گئی ہوں۔‘

جینیفر گراؤٹ کون ہیں؟

عرب دنیا کے سب سے بڑے میوزیکل شو ’عرب گاٹ ٹیلنٹ‘ میں شرکت کرکے صاف عربی زبان میں گانا گا کر سب کو حیران کرنے والی جینیفر گراؤٹ نے موسیقی کی تعلیم امریکا سے حاصل کی ۔

امریکی جریدوں کے مطابق جینیفر گراؤٹ امریکا میں پیدا ہوئیں اور وہیں پرورش پائی، وہ خالصتاً امریکی خاندان میں پیدا ہوئیں جس کا عرب ثقافت سے دور دور تک کوئی تعلق نہیں تھا۔

نوجوانی میں جینیفر گراؤٹ کو عرب ثقافت میں دلچسپی پیدا ہوئی جس کے لیے وہ مراکش چلی آئیں۔ یہاں انہوں نےعرب میوزک کی ابتدائی معلومات حاصل کر کے ٹیلنٹ شو میں حصہ لینے کا فیصلہ کیا۔

ینیفر گراؤٹ’عرب گاٹ ٹیلنٹ ‘ میں غیر عربی زبان بولنے والی پہلی امریکی خاتون تھیں جنہیں عربی میں اپنا تعارف کروانا بھی نہیں آرہا تھا لیکن جب انہوں نے عربی زبان میں گانا گایا تو سب حیران رہ گئے۔ وہ یہ شو جیتنے میں تو کامیاب نہیں رہیں تاہم آخری راؤنڈ تک پہنچیں ۔

23 سال کی عمر میں دائرہ اسلام میں داخل ہونے والی جینیفر گراؤٹ نے سال 2013 میں ہی مراکشی نوجوان سے شادی کرلی تھی ، اب وہ مشرق وسطیٰ میں رہتی ہیں مگر امریکا بھی جاتی رہتی ہیں۔

سوشل میڈیا پر کیسے مشہور ہوئیں؟

جینیفر گراؤٹ نے اپنے سوشل میڈیا اکاؤنٹس پر ایک ویڈیو شیئر کی تھی جس میں وہ مصر سے تعلق رکھنے والے معروف قاری محمد صدیق ال منشاوی کے انداز میں قرآن پاک کی تلاوت کرتی نظر آرہی تھیں۔

جینیفر نے خوبصورت انداز میں قرآن پاک کی تلاوت کرکے لوگوں کے دل جیتے تھے۔ جینیفر کے یوٹیوب چینل پر ہزاروں فالورز ہیں جہاں ان کی تلاوت کی ویڈیوز بہت مقبول ہیں۔

خاص رپورٹ سے مزید