آپ آف لائن ہیں
پیر 8؍ ربیع الاوّل1442ھ 26؍اکتوبر2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

سیاہ رنگت کے باعث کم معاوضہ دیا گیا، سیرینا ولیمز

دینا بھر میں مقبول امریکی ٹینس اسٹار سیرینا ولیمز کا کہنا ہے کہ اُنہیں اپنی سیاہ رنگت کے باعث کم اہمیت اور کم معاوضہ دیا جاتا ہے۔

غیر ملکی میڈیا رپورٹس کے مطابق 39 سالہ ٹینس اسٹار سیرینا ولیمز نے اپنے ایک انٹرویو میں پہلی مرتبہ اپنے ساتھ رنگت کی وجہ سے ہونے والے مسائل پر کھل کر بات کی۔

انہوں نے کہا کہ دیگر سیاہ فام افراد کی طرح انہوں نے بھی نسلی تعصب کا سامنا کیا ہے اور اُنہیں بھی سیاہ رنگت کے باعث نا صرف کم اہمیت دی گئی بلکہ انہیں معاوضہ بھی کم دیا گیا۔


سیرینا ولیمز نے انٹرویو میں اعتراف کیا کہ ٹیکنالوجی سیاہ فام افراد سمیت نسلی تعصب کا شکار دیگر افراد کے لیے مددگار ثابت ہوئی ہے۔ اب جہاں بھی کسی کو اس کی سیاہ رنگت کی وجہ سے تعصب کا نشانہ بنایا جاتا ہے، وہ فوراً اپنے مسئلے پر ٹوئٹ کرتا ہےاور لوگ اس کی آواز بنتے ہیں۔

سیرینا ولیمز نے بتایا کہ نسلی تعصب کا شکار ہونے کے باوجود اُنہوں نے کبھی اپنی رنگت نکھارنے یا سفید کرنے کے بارے میں نہیں سوچا بلکہ اُنہیں اپنی گہری اور سیاہ فام رنگت پر فخر ہے، اس کے علاوہ اُنہیں اس بات پر بھی فخر ہے کہ وہ ایسی رنگت رکھتی ہیں جو دنیا میں تبدیلی کا سبب بن رہی ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ بہت اچھی بات ہے کہ اب گہری اور سیاہ رنگت والی خواتین کی بھی میڈیا میں تشہیر ہونے لگی ہے۔

سیرینا ولیمز نے یہ واضح نہیں کیا کہ اُنہیں کہاں کہاں امتیازی سلوک کا سامنا کرنا پڑا لیکن اُن کا اشارہ یقیناً ٹینس کی فیلڈ کی جانب تھا۔

سیرینا ولیمز کو نا صرف سیاہ فام افراد بلکہ خواتین کے خلاف ہونے والے مسائل پر آواز اُٹھانے والی خاتون کے طور پر بھی جانا جاتا ہے اور انہوں نے ہمیشہ استحصال اور تشدد کے شکار طبقے کے لیے آواز اٹھائی ہے۔

واضح رہے کہ سیرینا ولیمز کا شمار نہ صرف امریکا بلکہ دنیا بھر کی معروف ٹینس کھلاڑیوں میں ہوتا ہے، انہوں نے 23 گرینڈ سلم جیت رکھے ہیں جبکہ انہوں نے 2017 میں حاملہ ہونے کے باوجود آسٹریلین اوپن شپ جیتی تھی۔

کھیلوں کی خبریں سے مزید