آپ آف لائن ہیں
منگل8ربیع الثانی 1442ھ 24؍نومبر 2020ء
  • بانی: میرخلیل الرحمٰن
  • گروپ چیئرمین و ایگزیکٹوایڈیٹر: میر جاوید رحمٰن
  • گروپ چیف ایگزیکٹووایڈیٹرانچیف: میر شکیل الرحمٰن
Jang Group

اقتصادی رابطہ کمیٹی، گندم کی سرکاری قیمت میں 200 روپے من اضافہ

اقتصادی رابطہ کمیٹی، گندم کی سرکاری قیمت میں 200 روپے من اضافہ


اسلام آباد (نمائندہ جنگ) کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے آئندہ مالی سال کےلیے گندم کی کم از کم امدادی قیمت میں 200روپے اضافہ کر کے 1600 روپے فی 40کلوگرام مقرر کرنے کا فیصلہ کیا ہے ،صنعتی صارفین کیلئے اضافی بجلی 12.96روپے فی یونٹ فراہم کرنیکی بھی منظوری،کے الیکٹرک کوپیکیج میں شامل کرنےکیلئے کمیٹی قائم کردی گئی۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ گندم کی کم ازکم امدادی قیمت کی آج منظوری دے گی ، ای سی سی 2020-21کیلئے 1600روپے فی من امدادی قیمت کی تجویز وفاقی کابینہ میں پیش کرے گی،ای سی سی نے زیرو ریٹیڈ ڈ برآمدی صنعت سمیت تمام صنعتی صارفین کیلئے اضافی بجلی 12.96روپے فی یونٹ کی شرح سے فراہم کرنے کی بھی منظوری دی۔

ای سی سی نے ٹریڈنگ کارپوریشن آف پاکستان کیلئے گندم کی درآمد 15لاکھ میٹرک ٹن سے بڑھا کر 18لاکھ میٹرک ٹن تک کرنےکی بھی منظوری دی،ای سی سی کا مشیر خزانہ کی زیر صدارت ہوا۔

اجلاس میں2020-21 کیلئے کابینہ کے سامنے گندم کی کم از کم امدادی قیمت 1600 روپے فی من کی تجویز پیش کرنے کا فیصلہ کیا گیا، اجلاس کوبتایا گیاکہ امدادی قیمت کاطریقہ کارگندم کی پیداوارمیں اضافہ ، مارکیٹ کے استحکام اورکسانوں کے منافع بڑھانے میں کلیدی کردار اداکرتاہےاجلاس میں فیصلہ کیا گیاکہ روس سے بین الحکومتی بنیادوں پرپاسکوکے ذریعہ 3 لاکھ میٹرک ٹن گندم درآمد کی جائیگی۔

ای سی سی نے وزارت قومی غذائی تحفظ وتحقیق کی روس سے بین الحکومتی انتظامات کے تحت 3 لاکھ 20ہزارمیٹرک ٹن گندم کی خریداری سے متعلق درخواست کی منظوری ۔ایگری ٹیک اورفاطمہ فرٹیلائزرزکیلئے گیس کے نرخ مقررکرنے سے متعلق وزارت صنعت وپیداوارکی درخواست پرای سی سی نے فیصلہ کیاکہ 3 نومبرکے بعد کے مدت میں دونوں پلانٹس کیلئے 772 روپے فی ایم ایم بی ٹی یو اورفی بوری 186 روپے کے حساب سے نرخ کی پیشکش کی جائیگی۔

اہم خبریں سے مزید